پاک کالونی کے مکینوں کا متحدہ کے کارکنوں کی گرفتاری کیخلاف احتجاج

November 28, 2015 2:27 pm0 commentsViews: 28

بڑا بورڈ پر ٹائر نذرآتش کرکے رکاوٹیں کھڑی کر دیں جس سے بدترین ٹریفک جام ہو گیا
رابطہ کمیٹی کے رکن عبدالحسیب دو گھنٹے بعد احتجاج میں شامل ہوئے، بات چیت کرکے لوگوں کو منتشر کر دیا
کراچی(کرائم رپورٹر)پاک کالونی کے مشتعل مکینوں نے متحدہ قومی موومنٹ کے کارکنان کی شہربھر سے گرفتاری پر رینجرزکے خلاف احتجاج کیا جس کے باعث بدترین ٹریفک ہوگیا ۔تفصیلات کے مطابق جمعہ کی صبح ساڑھے دس بجے پاک کالونی کے علاقے پرانا گولیمار اور ولی مراد ویلیج و یگر علاقوں کے مشتعل مکینوں جس میںخواتین اور بچے بھی شامل تھے انھوں نے بڑا بورڈ روڈ پرٹائرنذرآتش اوررکاوٹیں کھڑی کرکے رینجرز کے خلاف احتجاج شروع کردیا ،ایس ایچ او عرفان آفریدی اس اطلاع پر پولیس کی بھاری نفری کے ہمراہ موقع پرپہنچ گئے ،پولیس نے بتایاکہ پاک کالونی کے رہائشی اور متحدہ قومی موومنٹ کے ہمدردوں نے پوسٹر اور بینراٹھائے ہوئے تھے انکا مطالبہ تھا کہ شہر بھر سے رینجرز کی جانب سے گرفتار کیئے گئے متحدہ قومی موومنٹ کے کارکنان کو رہا کیاجائے ،پولیس کے مطابق مشتعل افراد نے پرامن طور پر گھنٹے تک اپنا احتجاج جاری رکھا اور رینجرز کے خلاف شدید نعرے بازی کی ، جس کے باعث بڑا بورڈ ، پرانا گولیمار ،گٹر باغیچہ و دیگر لنک روڈ پر بدترین ٹریفک جام ہوگیا اور گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگ گئیں ،مشتعل مظاہرین کا کہنا تھا کہ رینجرز اور پولیس اہلکارمتحدہ قومی موومنٹ کے کارکنوں کو گرفتار کررہے ہیں ، کچھ دنوں کے اندر رینجرز اہلکاروں نے ہمارے 100 سے زائد کارکنوں کو گرفتار کرکے نامعلوم مقام پر منتقل کردیا گیا ہے ، مشتعل مظاہرین کا کہنا ہے کہ رینجرز نے متحدہ قومی موومنٹ کے جن کارکنوں کو گرفتار کیا ہے ان کو رہا کیا جائے ،ایس ایچ او عرفان آفریدی کے مطابق متحدہ قومی موومنٹ کے رابطہ کمیٹی کے رکن عبدالحسیب دو گھنٹے کے بعداحتجاج میں شامل ہوئے انھوں نے اپنے کارکنان اور ہمدردوں کو بات چیت کرکے منتشر کردیا اس کے بعد ٹریفک کی روانی دوبارہ بحال ہوگئی ۔

Tags: