ملک میں جمہوری آمریت ہے،قوم کو اکیلا نہیں چھوڑوں گا،عمران خان

November 28, 2015 2:28 pm0 commentsViews: 25

نوازشریف کی ڈکٹیٹر شپ پرویزمشرف کی ڈکٹیٹرشپ سے بھی زیادہ بری ہے،وہ میچ کھیلنے اپنا امپائر ساتھ لاتے ہیں
ظلم کے خلاف کھڑا ہونا جہاد ہے،آج چھوٹے بچے جیلوں اور بڑے ڈاکو اسمبلیوں میں ہیں، جلسہ عام سے خطاب
اسلام آباد( نیوز ڈیسک) پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ’’ جمہوری آمریت‘‘ ہے‘ چور چور کا احتساب نہیں کرسکتا‘ زرداری کو پتا تھا کہ شیر شیر کا شکار نہیں کریگا‘ نواز شریف کی ڈکٹیٹر شپ پرویز مشرف کی ڈکٹیٹر شپ سے زیادہ بری ہے‘ نواز شریف تو میچ کھیلنے کیلئے اپنا ایمپائر ساتھ لائے تھے‘ آئوٹ ہوجاتے تو ایمپائر نو بال قرار دیدیتا‘ وہیں سے ان کی عادتیں بگڑیں‘ نواز شریف نیو ٹرل میچ کے عادی ہوتے تو سیاست بھی نیوٹرل کرتے‘ ظلم کیخلاف کھڑے ہونا جہاد ہے‘ چھوٹے بچے‘ جیلوں اور بڑے ڈاکو اسمبلیوں میں ہیں‘ ہم شریفوں اور زرداریوں کا نہیں بلکہ اقبال اور جناح کا پاکستان چاہتے ہیں‘ سندھ اور پنجاب کے بلدیاتی انتخابات میں دھاندلی ہوئی‘ جب تک زندہ ہوں کبھی اپنی قوم کو اکیلا نہیں چھوڑوں گا‘ سب جماعتیں ایک طرف اور تحریک انصاف ایک طرف ہے‘ میں وزیر نہیں‘ میرے پاس کوئی عہدہ نہیں‘ پھر بھی مجھے جلسہ گاہ آنے سے روکا گیا‘ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعہ کو ترامڑی چوک میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔عمران خان نے کہا کہ اگر جمہوری نظام میں رہ رہے ہیں تو کیا میرا حق نہیں کہ اپنا منشور لوگوں تک پہنچا سکوں اور اپنے لوگوں کے سامنے آکر بات کروں‘ میں وزیر نہیں تحریک انصاف کا منشور لے کر عوام کے سامنے آیا ہوں‘ میاں صاحب کو سیاست سے پہلے ہی غلط عادتیں لگ گئیں تھیں۔

Tags: