نیب ریفرنس ،ڈاکٹر عاصم کی باقاعدہ گرفتاری ،آج عدالت میں پیشی ہوگی

November 30, 2015 1:06 pm0 commentsViews: 66

انسداد دہشت گردی کی عدالت میں سابق وزیر پیٹرولیم کا جسمانی ریمانڈ نہ ملا تو احتساب عدالت میں پیش کیا جائے گا
سندھ حکومت اور رینجرز میں ڈاکٹر عاصم کے معاملے پر چپقلش جاری، آج نیب کی جانب سے تحویل میں لئے جانے کا امکان
کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک) سابق وزیر پیٹرولیم ڈاکٹر عاصم کو نیب ریفرنس میں باقاعدہ گرفتار کر لیا گیا، ڈاکٹر عاصم کو رینجرز نے نوے روزہ ریمانڈ کے بعد نارتھ ناظم آباد پولیس کے حوالے کیا تھا، سابق صدر پاکستان آصف علی زرداری کے قریبی دوست اور سابق وزیر پیٹرولیم ڈاکٹر عاصم سے تفتیش کیلئے نیب کی تحقیقاتی ٹیم اتوار کی دوپہر گلبرگ تھانہ پہنچی، تحقیقاتی ٹیم نے ڈاکٹر عاصم کو باقاعدہ نیب ریفرنس میں گرفتار کر لیا، تاہم ڈاکٹر عاصم حسین نارتھ ناظم آباد پولیس کی تحویل میں ہی رہیں گے، ڈاکٹر عاصم پر سیاسی اثرو رسوخ کا غلط استعمال کرکے من پسند افراد کو ٹھیکہ دلوانے و کرپشن اور دہشت گردوں کو اپنے نجی اسپتالوں میں علاج کا الزام ہے، نیب نے سابق وفاقی وزیر اور آصف زرداری کے قریبی ساتھی ڈاکٹر عاصم حسین کی ایک اور مقدمہ میں گرفتاری ڈال دی ہے نیب نے کرپشن ریفرنس میں سابق وزیر پیٹرولیم اور آصف علی زرداری کے قریبی دوست ڈاکٹر عاصم حسین کی گرفتاری ظاہر کر دی ہے، ڈاکٹر عاصم کے خلاف1984 میں بنائے گئے ٹرسٹ اسپتال کو کمرشل بنیادوں پر چلانے کے الزامات کی تحقیقات کی جارہی ہے، جس میں ڈاکٹر عاصم کی باقاعدہ گرفتاری ظاہر کر دی گئی ہے، انہیں آج جسمانی ریمانڈ کی مدت مکمل ہونے پر انسداد دہشتگردی کی عدالت میں پیش کیا جائے گا، جہاں سے جسمانی ریمانڈ نہ ملنے پر انہیں احتساب عدالت میں پیش کیا جائے گا۔

Tags: