واٹر بورڈ کا شعبہ الیکٹریکل اینڈ میکینکل کروڑ روپے ڈکار گیا

November 30, 2015 1:32 pm0 commentsViews: 25

افسران نے پرانے پمپس کورنگ وروغن کرکے نیا بنا دیا، مرمت کے نام پر بھاری کرپشن
تحقیقاتی اداروں نے تفتیش کا آغاز کر دیا، سابقہ اور موجودہ افسران کے گرد گھیرا تنگ
کراچی( سٹی رپورٹر) تحقیقاتی ادارے حرکت میں آگئے،کراچی واٹر بورڈ شعبہ الیکٹریکل اینڈ مکینکل کے افسران کروڑوں روپے مبینہ طور پر ڈکار گئے ،پُرانے پمپس کو رنگ روغن کر کے نیا بنادیا گیا،کراچی کو پانی سپلائی کرنے والے اہم دھابیجی پمپنگ اسٹیشن کی مرمت کے نام پر اربوں روپے کی کرپشن کا انکشاف‘ تفصیلات کے مطابق کراچی واٹر اینڈ سیوریج بورڈ کے شعبہ الیکٹریکل اینڈ مکینکل کے افسران کی جانب سے دھابیجی پمپنگ اسٹیشن جو کہ کراچی کو پانی سپلائی کرنے والا اہم پمپنگ اسٹیشن ہے اس کی مشینری کی درستگی کے نام پر کروڑوں روپے کی لوٹ مار کا انکشاف ہوا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ گزشتہ دو سالوں کے دوران پمپنگ اسٹیشن میں مرمت و درستگی اور پیرا 58 کے ذریعے مبینہ طور پر ڈیڑھ ارب روپے سے زائد کے اخراجات کئے گئے ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ مذکورہ مرمت کے کاموں میں کروڑوں روپے مبینہ طور پر ہڑپ کئے گئے ہیں جس کے باعث دھابجی پمپنگ اسٹیشن تاحال ابتر صورتحال سے دوچار ہے اور پمپس فعال نہیں ہوسکے ہیں جس کے باعث مطلوبہ مقدار میں پانی پمپ نہیں کیا جاتا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ دھابیجی پمپنگ اسٹیشن میں مبینہ طور پر اربوں روپے کی بدعنوانیوں پر ایم ڈی واٹر بورڈ نے بھی سخت برہمی کا گزشتہ دنوں اظہار کیا تھا اور واضح کیا تھا کہ دھابیجی پمپنگ اسٹیشن کی درستگی کے لئے متعلقہ افسران نے فوری اقدام نہیں کئے تو ان کے خلاف ریفرنس نیب کو بھیج دیا جائے گا۔ذرائع کا مزید کہنا ہے کہ دھابیجی پمپنگ اسٹیشن سمیت شہر کے دیگر پمپنگ اسٹیشن میں ناقص مشینری کے استعمال کے ذریعے اربوں روپے کی کرپشن کی گئی ہے جس پر تحقیقاتی اداروں نے تحقیقات کا آغاز کردیا ہے اور موجودہ اور سابقہ افسران کے گرد گھیرا تنگ کیا جارہا ہے۔

بنارس سمیت مختلف علاقوں میں کھلے عام پانی کی چوری
واٹر بورڈ کی لائنوں سے ناجائز کنکشن لے کر پانی چوری کرکے فروخت کیا جا رہا ہے
پانی کی چوری روکنے کیلئے اقدامات کرنا ہوں گے، ایم ڈی واٹر بورڈ کا کمشنر کراچی کو خط
کراچی (سٹی رپورٹر) کراچی واٹر اینڈ سیوریج بورڈ کی مین ٹرنک لا ئنوں سے پا نی چور غیر قا نو نی کنکشنز لگا کر کھلے عام پانی چوری کر کے فروخت کر رہے ہیں ، جس سے ایسے علا قوں میں پا نی کی قلت کے علا وہ واٹر بورڈ کی لا ئنوں و تنصیبا ت کو شدید نقصان پہنچ رہا ہے لا ئنوں میں لیکجز بڑھتی جا رہی ہیں جس سے پا نی ضا ئع ہو رہا ہے پانی چور لا ئنوں کو جگہ جگہ سے چھلنی کر رہے ہیں یہ پانی چور واٹر بورڈ کو ما لی نقصان بھی پہنچا رہے ہیں واٹر بورڈ طویل عر صہ سے وقتاً فوقتاً رینجرز ، ضلعی انتظا میہ اور پو لیس کی مدد سے نا جا ئز کنکشنز منقطع کر رہا ہے لیکن پانی چوری کا یہ سلسلہ پھر بھی جا ری ہے خا ص طور پر بنا رس چوک ، فر نیٹر کا لونی ، با وانی چا لی ، سپر ہا ئی وے ، شادمان موڑ ، اسکیم 33، احسن آباد ،خیا با ن شریف ، سیفل گو ٹھ ، خمیسو گو ٹھ ، ایو ب گو ٹھ اور شہر کے مختلف علا قوں میں پا نی چوری کا سلسلہ بڑے پیما نہ پر دیدہ دلیری سے جا ری ہے لہٰذا اس سلسلہ میں کراچی واٹر اینڈ سیوریج بورڈ کے منیجنگ ڈائریکٹر مصباح الدین فرید نے کمشنر کراچی شعیب احمد صدیقی کی توجہ بذریعہ مکتوب کراچی کے مختلف علا قوں میں نا جا ئز کنکشنز لگا نے کی جا نب مبذول کراتے ہو ئے کہا ہے کہ شہر کے مختلف علا قوں میں واٹر بورڈ کی بلک فراہمی آب کی لا ئنوں سے نا جا ئز کنکشنز کے ذریعہ پا نی چوری کر کے فروخت کر نے کا کا روبار عروج پر ہے ، جس کے سبب ان گنت مسا ئل جنم لے رہے ہیں جن میں سب سے بڑا مسئلہ یہ ہے کہ واٹر بورڈ شہریوں کو منصفا نہ و مساویا نہ طور پر پا نی فراہم کر نے سے قا صر ہے ۔

کار ساز روڈ پر لگے سائن بورڈز کے اجازت نامے منسوخ کرنے کی ہدایت
شاہراہ نیشنل اسٹیڈیم سے شاہراہ فیصل حبیب رحمن اللہ روڈ کی خوبصورتی متاثر ہو رہی ہے، واٹر بورڈ
کراچی ( سٹی رپورٹر)منیجنگ ڈائریکٹر کراچی واٹر اینڈ سیوریج بورڈ مصبا ح الدین فرید نے چیف ایگزیکٹو آفیسر فیصل کنٹونمنٹ بورڈ کی توجہ نیشنل اسٹیڈیم سے شاہراہ فیصل حبیب رحمت اللہ روڈ کارساز پر بڑے سائز کے بل بورڈ / سائن بورڈ کی جانب مبذول کر اتے ہوئے کہا ہے کہ ان سائن بورڈ کی وجہ سے نہ صرف روڈ کی خوبصورتی متاثر ہورہی ہے بلکہ اس اہم روڈ کے دونوں اطراف کی جگہ واٹر بورڈ نے مستقبلکے منصوبو ں کے لئے مختص کی ہوئی ہے ، اس سے قبل یہ زمین صرف ما حول کو خوشگوار رکھنے کے لئے نرسریوں اور گرین بیلٹ کی حیثیت سے استعمال ہو تی تھی لیکن اب اس زمین پر مختلف کمپنیوں کے بڑے سائز کے سائن بورڈ مصنوعات کی پبلسٹی کے لئے لگا کر اسے کمر شل طریقہ پر استعمال کیاجارہا ہے۔واٹر بورڈ کی تنصیبات کے تحفظ کے پیش نظرعوام الناس کے مفاد کو مد نظر رکھتے ہوئے ان بل بورڈ کو جاری کئے گئے اجازت ناموں کو فوری طور پرمنسوخ کیاجائے اور اس سلسلہ میں واٹر بورڈ کو آگاہ کیاجائے ، واضح رہے کہ کنٹونمنٹ بورڈ اس قسم کے اشتہاری بل بورڈ جو واٹر بورڈ کی زمین پر لگا ئے گئے ہیں واٹر بورڈ سے اجازت نہیں لی گئی ۔

Tags: