ایف بی آر کا موبائل فون صارفین سے 38 ارب بٹورنے کا انکشاف

December 9, 2015 3:08 am0 commentsViews: 14

موبائل فون کا رڈ اور ایزی لوڈ پر ودہولڈنگ ٹیکس خودبخود کٹ جاتا ہے
کراچی( نیوز ڈیسک) ایف بی آر کی جانب سے موبائل فون کارڈ اور ایزی لوڈ پر ود ہولڈنگ ٹیکس کی مد میں سالانہ38 ارب روپے صارفین سے بٹورنے کا انکشاف ہوا ہے، ذمہ دار ذرائع مطابق ملک بھر میں12 کروڑ سے زائد موبائل فون صارفین جن کی بہت بڑی اکثریت سالانہ انکم ٹیکس گوشوارے جمع نہیں کراتی، ایف بی آر کیلئے آمدنی کا سب سے بڑا ذریعہ بن گئے ہیں۔ موبائل کارڈ اور لوڈ پر5 فیصد ود ہولڈنگ ٹیکس ہونے کی وجہ سے جیسے ہی کوئی صارف اپنے موبائل فون میں کارڈ یا ایزی لوڈ کراتا ہے تو ود ہولڈنگ ٹیکس خود بخود کٹ جاتا ہے مگر واپس صرف انہیں صارفین کو کیا جاتا ہے جو اپنے سالانہ ٹیکس گوشوارے جمع کراتے ہیں۔ ذرائع کے مطابق اس مد میں ایف بی آر کو سالانہ43 ارب کی آمدنی ہوتی ہے۔ جبکہ ملک بھر میں سالانہ انکم ٹیکس گوشوارے جمع کرنیوالوں کی تعداد8 سے9 لاکھ ہے جن کو ریفنڈ طلب کرنے پر سالانہ5 ہزار سے 6 ہزار روپے تک کی رقم واپس کی جاتی ہے۔ اسی طرح موبائل صارفین سے سالانہ43 ارب روپے ود ہولڈنگ ٹیکس وصول کرکے5 ارب روپے کے لگ بھگ واپس کئے جاتے ہیں جبکہ38 ارب روپے ہر سال فیڈرل بورڈ آف ریونیو کے پاس بچ جاتے ہیں۔

Tags: