خواتین کی صحت و صفائی کے نظام کی تشکیل کیلئے سمپوزیم کا انعقاد

December 9, 2015 3:03 am0 commentsViews: 51

سمپوزیم میں صحت نسواں سے متعلق حل کیلئے مربوط حکمت عملی تشکیل دینے کا اتفاق
اسلام آباد( پ ر) خواتین کے ایام مخصوصہ کے دوران صحت و صفائی کے نظام ( Menstrual Hygiene Managment)کیلئے کام کرنے والے ایم ایچ ایم ورکنگ گروپ کے تحت صحت نسواں کے بارے میں پاکستان کے پہلے سمپوزیم کا انعقاد اسلام آباد میں کیا گیا۔ رکن صوبائی اسمبلی پنجاب اور ہیلتھ اینڈ جینڈر مین اسٹریمنگ کی رکن ڈاکٹر نوشین حامد معراج سمپوزیم کی مہمان خصوصی تھیں۔ سمپوزیم میں صحت، تعلیم، میڈیا، نجی شعبے اور انسانی ترقی کیلئے کام کرنے والے اداروں کے ماہرین کی بڑی تعداد نے شرکت کی اور موضوع سے متعلق چیلنجز اور مسائل پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ پاکستان میں اپنی نوعیت کے اس پہلے سمپوزیم نے خواتین کے مخصوص ایام کے دوران صحت و صفائی کے نظام کی تشکیل کے بارے میں تبادلہ خیال کیلئے فورم مہیا کیا۔ سمپوزیم میں شریک ماہرین نے پاکستان میں صحت سے متعلق مسائل کے حل کیلئے مربوط حکمت عملی تشکیل دینے پر اتفاق کیا۔ سمپوزیم کا انعقاد ملک گیر سطح پر صحت نسواں کے بارے میں شعور اجاگر کرنے کی ان کوششوں کا حصہ ہے۔ سمپوزیم میں اظہار خیال کرتے ہوئے یونیسیف پروگرامWASH کے سربراہ Timothy Grieveنے کہا کہ پاکستان میں ڈیڑھ کروڑ لڑکیاں مخصوص ایام کے دوران صحت و صفائی کی مناسب سہولتیں مہیا نہ ہونے کی وجہ سے اسکول نہیںجاتیں، ریسرچ کے مطابق بالغ لڑکیوں میں29 فیصد لڑکیاں مخصوص ایام کی وجہ سے سال میں20 روز اسکول کا ناغہ کرتی ہیں۔ سمپوزیم میں ڈاکٹر شہلا اکرم، ڈاکٹر ناصر جمال خٹک، Bella Evidenteعائشہ اشرف چوہدری او طلعت حسین نے بھی اظہار خیال کرتے ہوئے یونیسیف، یو این ہیبی ٹیٹ، واٹر ایڈ، پلان انٹر نیشنل ، آئی آر سی کی نمائندگی کی۔ سمپوزیم میں ہینڈز AHKMT, Piedar، سیودی چلڈرن آئی آر ایس پی ، مسلم ایڈ، این آر ایس پی، آغا اورPIMS کے نمائندوں نے بھی شرکت کی۔