آج سندھ اسمبلی میں رینجرز کے اختیارات سے متعلق قرارداد پیش کی جائیگی

December 10, 2015 1:04 pm0 commentsViews: 20

قرار داد کے متن میں کرپشن کے الزام میں گرفتار افراد کے خلاف مقدمات انسداد دہشت گردی کی عدالت میں نہ چلانے اور دیگر نکات شامل
شہر میں رینجرز کا آپریشن آخر دہشت گرد کے خاتمے تک جاری رہے گا مگر کرپشن پر دہشت گردی کا مقدمہ درست نہیں، مولا بخش چانڈیو
کراچی( آن لائن) سندھ حکومت نے صوبائی اسمبلی کے اجلاس میں پیش کرنے کیلئے رینجرز کے اختیارات سے متعلق قرار داد کا متن تیار کرلیا ہے۔ قرار داد سینئر صوبائی وزیر نثار کھوڑو آج سندھ اسمبلی کے اجلاس میں پیش کریں گے۔ ذرائع کے مطابق قرار داد کے متن میں کرپشن کے الزام میں گرفتار افراد کے خلاف مقدمات انسداد دہشت گردی کی عدالت میں نہ چلانے اور رینجرز کے اختیارات میں آئندہ4 ماہ کی توسیع سمیت دیگر نکات شامل کئے گئے ہیں۔ مشیر اطلاعات سندھ مولا بخش چانڈیو کا کہنا ہے کہ سندھ حکومت رینجرز کے اختیارات میں توسیع کے خلاف نہیں ہے لیکن یہ چاہتی ہے کہ کرپشن کے مقدمات دہشت گردی کی عدالت میں نہ چلائے جائیں۔ انہوں نے کہا کہ رینجرز کی جانب سے کی جانے والے موجودہ کارروائیاں غیر قانونی نہیں ہیں ان کا کہنا تھا کہ رینجرز کا آپریشن شہر میں آخری دہشت گرد کے خاتمے تک جاری رہے گا۔ تاہم کرپشن کے الزام میں گرفتار افراد پر دہشت گردی کا مقدمہ درست نہیں ہے۔

رینجرز کو بلائے جانے کی منظوری بھی ایوان سے لی جائے گی، نثار کھوڑو
اسمبلی میں رینجرز کے اختیارات سے متعلق قرار داد پیش کی جائے گی، میڈیا سے بات چیت
کراچی( اسٹاف رپورٹر) سندھ کے سینئر وزیر تعلیم و پارلیمانی امور نثار احمد کھوڑو نے کہا ہے کہ رینجرز کا کام ٹارگٹ کلنگ، بھتہ خوری، اغواء برائے تاوان کا خاتمہ اور دہشت گردوں کی بیخ کنی کرنا ہے۔ آرٹیکل147 کے تحت رینجرز کو دیگر کارروائیاں کرنے کے لئے وزیر اعلیٰ سندھ سے پیشگی منظوری لینی ضروری ہے اور ہم چاہتے ہیں کہ اس پر عمل کیا جائے اور سندھ اسمبلی کے اجلاس میں اس کے متعلق قرار داد پیش کی جائے گی۔ اور رینجرز کو بلائے جانے کی منظوری بھی ایوان سے لی جائے گی۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے بدھ کو سندھ اسمبلی میں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔ نثار کھوڑو نے کہا کہ رینجرز کو جولائی میں امن و امان کے قیام میں پولیس کی مدد کیلئے بلایا گیا تھا اور رینجرز کو بلائے جانے کی اسمبلی سے منظوری ضروری ہے جو کہ ابھی تک نہیں ہوئی اس لئے پہلے مرحلے میں سندھ اسمبلی سے رینجرز کے بلانے کی منظوری لی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ رینجرز کے اختیارات کے متعلق قرار داد اسمبلی میں پیش کی جائے گی اور جس پر اراکین اسمبلی اظہار خیال کر سکتے ہیں اور اسمبلی فیصلہ کرے گی۔