کراچی سمیت سندھ بھر میں عمارتوں کا ریکارڈ کمپیوٹرائزڈ کرنے کی ہدایت

December 10, 2015 1:40 pm0 commentsViews: 25

اگر کسی نے کرپشن کی ہے تو اس کیخلاف قانونی کارروائی عمل میں لانی چاہیے، وزیر بلدیات
ایک ادارے کی دوسرے ادارے میں مداخلت کو کسی صورت برداشت نہیں کیا جائے گا، اجلا س سے خطاب
کراچی( اسٹاف رپورٹر) وزیر بلدیات سندھ جام خان شورو نے کہا ہے کہ کراچی سمیت سندھ میں ماسٹر پلان کو از سر نو مرتب کرنے اور تمام عمارتوں کا ریکارڈ کمپیوٹرائزڈ کرنے کیلئے سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی ( ایس جی بی اے) کو ہدایت جاری کر دی گئی ہیں۔ ایک ادارے کے دوسرے ادارے میں مداخلت کو کسی صورت برداشت نہیں کیا جائیگا۔ ایس بی سی اے میں نیب، ایف آئی اے سمیت دیگر وفاقی اداروں کی مداخلت پر وزیر اعلیٰ نے وفاق سے تحفظات کا اظہار کیا ہے۔ اور کسی ادارے کو دوسرے ادارے کی معلومات کی مداخلت کی اجازت نہیں دے سکتے۔ اگر کسی نے کرپشن کی ہے تو اس کے خلاف قانونی کارروائی عمل میں لائی جانی چاہئے۔ محکمہ ایس بی سی اے میں خالی اسامیوں کو پر کرنے اور ترقیوں کے حوالے سے بھی ڈی جی کو ہدایات جاری کر دی گئی ہیں جبکہ ڈیزاسٹر مینجمنٹ یونٹ کے قیام کی بھی ہدایات جاری کر دی گئی ہیں۔ اور تمام مخدوش عمارتوں کا یکارڈ دیگر اداروں سے شیئر کرنے اور اسے جی پی ایس کے ذریعے گوگل پر فراہم کرنے کیلئے بھی کہا گیا ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کے مرکزی دفتر کے دورے کے دوران منعقدہ اجلاس سے خطاب اور بعد ازاں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔