اغواء برائے تاوان کے7 مجرموں کی سزائے موت عمر قید میں تبدیل

December 11, 2015 12:18 pm0 commentsViews: 14

سندھ ہائی کورٹ کے ڈویژن بنچ نے مغوی کو کوئی نقصان نہ پہنچانے پر سزا میں تخفیف کر دی
2005ء میں کامران نامی شخص کو اغواء کرکے رہائی کے عوض5 لاکھ روپے تاوان طلب کیا تھا
کراچی(نیوز ڈیسک) سندھ ہائی کورٹ نے اغوا برائے تاوان کے7 مجرموں کی سزائے موت کو عمر قید میں تبدیل کردیا۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق سندھ ہائی کورٹ میں جسٹس احمدعلی شیخ کی سربراہی میں 2 رکنی بینچ نے 7 مجرموں کی سزائے موت کے خلاف درخواست کی سماعت کی، مجرموں میں سید کلیم،علی احمد، محمد حسن، بلال، عبدالفتح ، ارشد پرویز اور محمد صدیق پر الزام تھا کہ انہوں نے2004میں کامران نوید نامی نوجوان کو اغوا کر کے 20 لاکھ روپے تاوان وصول کیا، انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت نے 2005 میں تمام مجرموں کو موت کی سزا سنائی تھی ،فریقین کے دلائل سننے کے بعد عدالت عالیہ نے ساتوں مجرموں کی سزائے موت کو عمرقید میں تبدیل کردیا۔