رینجرز کے اختیارات بحال نہ ہوئے تو سندھ اسمبلی کا گھیرائو کرینگے،تاجروں کی دھمکی

December 12, 2015 4:16 pm0 commentsViews: 25

موجودہ حالات میں رینجرز کو بے اختیار کیا گیا تو بھتہ خور پھر فعال ہوجائیں گے اور امن کی کوششوں کو دھچکا لگے گا
سیاسی جماعتیں اپنی صفوں کو مجرموں سے پاک کریں تو رینجرز کا خو ف خودبخود ختم ہوجائے گا، عتیق میر ،اکرم رانا ودیگر
کراچی( کامرس رپورٹر) کراچی کے تاجروں نے حکومت سندھ سے پر زور مطالبہ کیا ہے کہ کراچی میں امن و امان کی اطمینان بخش اور حوصلہ افزا صورت حال کے خلاف کسی بھی نا مناسب فیصلے سے گریز کیا جائے اور بحالی امن کے تحت فعال اور موثر کردار ادا کرنے والے سیکورٹی اداروں کی کارکردگی میں رکاوٹ بننے کی کوشش نہ کی جائے۔ بھتہ خوروں کی سرپرست حکومت سندھ بھتہ خوروں کا راستہ دوبارہ کھولنے کی کوشش نہ کریں، رینجرز کے اختیارات بحال نہ کئے گئے تو تاجر سندھ اسمبلی کا گھیرائو کریں گے، منگل15 دسمبرکو تاجروں کا ہنگامی اجلاس بلالیا گیا، جمعہ کو ایک بیان میں آل کراچی تاجر اتحاد کے چیئر مین عتیق میر و دیگر تاجر رہنمائوں اکرم رانا، انصار بیگ قادری، طارق ممتاز زبیر علی خان، عبدالغنی اخوند، احمد شمسی، شیخ محمد عالم، شمیع اللہ خان، سید شرافت علی، ملک اسلم، جاوید آرائیں، ضیاء عمر سہگل، الطاف لالہ، میر عبدالحئی خان، محمد آصف، دلشاد بخاری، عبدالقادر اور محمد عارف، عبدالحکیم شاہ، عرفان اللہ، امان اللہ، شاکر فینسی، اور دیگر نے شہر میں قیام امن کے تحت رینجرز کی بے مثال کارکردگی کو سراہتے ہوئے کہا ہے کہ موجودہ حالات میں رینجرز کو بے اختیار کیا گیا ہے تو بھتہ خور پھر با اختیار ہوجائیں گے۔ امن و امان کے تحت کی گئی کوششوں کو دھچکا پہنچے گا اور زیر زمین چھپے ہوئے بھتہ خور اور اغواء کار دوبارہ فعال ہوجائیں گے۔ تاجروں نے کہا کہ تاجر برادری رینجرز کی کارکردگی سے پوری طرح مطمئن ہے سیاسی جماعتیں اپنی صفوں کو مجرموں سے پاک کریں۔ رینجرز کا خوف از خود ختم ہوجائے گی۔ رینجرز کی کارکردگی غلطیوں سے پاک نہیں ہے لیکن رینجرز کی غلطیوں پر تنقید کے ساتھ ساتھ اصلاح بھی تجویز کی جائے۔ عتیق میر نے کہا کہ رینجرز کے ٹارگٹڈ آپریشن کی بدولت شہر میں سرمایہ کاری کی فضال بحال ہو رہی ہے۔ کاروباری مراکز میں خوف کی فضا ختم، بھتہ خور اور اغواء برائے تاوان کی وارداتوں میں90 فیصد سے زائد کمی واقع ہوگئی ہے۔ جبکہ ٹارگٹ کلنگ میں بھی واضح طور پر کمی واقع ہونے سے شہر میں خوف و ہراس کی فضا کا خاتمہ ہو گیا ہے۔