ابراہیم حیدری، لینڈ مافیا کیخلاف کریک ڈائون40 ایکڑ زمین واگزار

December 12, 2015 4:44 pm0 commentsViews: 91

ریڑھی گوٹھ میں غیر قانونی اور جعلی اسکیموں کے نام پر قبضہ چھڑانے کیلئے کارروائی کے دوران قابضین کی مزاحمت
200 افراد کا خواتین اور بچوں کے ہمراہ احتجاج، مشتعل افراد کا ٹیم پر حملہ، 18 پولیس اہلکار زخمی ہو گئے
کراچی(کرائم رپورٹر)اینٹی انکروچمنٹ سیل نے ابراہیم حیدری کے علاقے ریڑہی گوٹھ میںلینڈ مافیاکے خلاف کارروائی کرکے غیر قانونی وجعلی رہائشی اسکیموںکے نام پرقبضہ کی گئی مزید 40ایکٹر زمین واگزار کرلیجبکہ لینڈ مافیا کی سر پرستی میںخواتین اور بچوں سمیت200سے زائد افراد نے احتجاج کیااورمشتعل افراد نے اینٹی انکروچمنٹ کی ٹیم پر حملہ کر دیا جس کے نتیجے میں18پولیس اہلکار زخمی ہو گئے جبکہ پولیس نے ہوائی فائرنگ اور شیلنگ کرکے مشتعل افرادکو منتشرکیا۔تفصیلات کے مطابق اینٹی انکروچمنٹ سیل نے جمعہ کے روز بھی ابراہیم حیدری کے علاقے ریڑی گوٹھ سے متصل450ایکٹر سے زائدزمین پر غیر قانونی اسکیموں اور قبضوں کے خلاف آپریشن کرتے ہوئے مزید 40 ایکڑزمین واگزار کرالی ہے جس کے بعد مجموعی طورپر140 ایکڑزمین قبضہ مافیا سے خالی کرالی گئی ہے ۔ایس ایس پی اینٹی انکروچمنٹ عارف عزیزنے بتایا ہے کہ زمینوں پر قبضوں میں ملوث ملزم طارق مسیح کی سر پرستی میں200سے زائد افراد نے انکروچمنٹ ٹیم پر پتھراؤ کیاجس کے نتیجے میں انچارج انکرچمنٹ ٹیم سمیت18اہلکار شدید زخمی ہوگئے جنہیں فوری طور اسپتال منتقل کیا گیا،جبکہ پولیس نے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لئے ہوائی فائرنگ کی اور آنسو گیس کے شیل فائر کئے جسکے بعد مظاہرین منتشر ہوگئے ۔