دہشت اور تنازعات سے بھرپور رائو انوار پھر ایس ایس پی ملیر تعینات

December 12, 2015 4:55 pm0 commentsViews: 24

متحدہ کے کارکنوں کی گرفتاری اور پھر ایک پریس کانفرنس کے بعد شدید مخالفت پر انہیں ہٹا دیا گیا تھا
ضلع ملیر میں کالعدم تنظیم کے کارندوں کے منظم ہونے پر انہیں دوبارہ یہاں تعینات کیا گیا ہے
کراچی (اسٹاف رپورٹر)بارہا تنازعات کے باوجود ایک بارپھر راؤ انوار کو ایس ایس پی ملیر تعینات کردیا گیا ، رائو انوار کو متحدہ قومی موومنٹ کے کارکنان کے حوالے سے پریس کانفرنس کیے جانے کے بعد ہٹا دیا گیا تھا۔ رائو انوار کا کہنا ہے کہ ضلع ملیر کے بیشتر علاقوں میں پھر سے کالعدم تنظیم کے کارندے منظم ہونا شروع ہوگئے ہیں جن کا صفایا سب سے اہم ٹاسک ہے۔ تفصیلات کے مطابق رائو انوار کو پھر سے ایس ایس پی ملیر تعینات کرنے کا نوٹیفیکیشن جاری کردیا گیا۔رائو انوار کا کہنا ہے کہ انکے ہٹنے کے بعد سے ضلع ملیر کے کچھ علاقے جن میں بالخصوس سہراب گوٹھ، گلشن بونیر، قائد آباد ، پپری اور کچھ علاقوں میں کالعدم تنظیموں کے کارندوں نے پھر سے منظم ہوٍٍٍنا شروع کردیا ہے جن کا صفایا سب سے اہم ٹاسک ہے انہوں نے کہا کہ ملیر کا چارج چھوڑنے کے بعد وہ شہر میں پولیس کی کلنگ کے حوالے سے تفتیش کررہے تھے اوراس پر بھی کام کرتے رہیں گے۔ واضح رہے کہ رائو انوار سال 2008سے ضلع ملیر کا چارج سنبھالتے آرہے ہیں اس کی بنیادی وجہ صسندھ کی صوبائی حکومت کی اہم شخصیت کے ساتھ مراسم ہیں اور انہیں اپریل میں متحدہ قومی موومنٹ کے کارکنا ن کی دشمن ملک خفیہ ایجنسی کے ساتھ رابطوں سے متعلق پریس کانفرنس کرنے کے بعد ملیر کے ایس ایس پی کے عہدے سے ہٹادیا گیا تھا۔