اعلیٰ تعلیم یافتہ نوجوانوں کا عالمی شدت پسندوں سے تعلق کا انکشاف

December 14, 2015 12:59 pm0 commentsViews: 157

حساس ادارے نے شدت پسند تنظیموں کے سہولت کاروں کے کوائف حاصل کر لیے
آئی ٹی ماہرین کی مدد سے سوشل میڈیا پر موجودہ اکائونٹس کی نگرانی شروع کر دی گئی
کراچی(نیوز ڈیسک) ملکی سلامتی پر مامور حساس ادارے نے شہر میں موجود بین الاقوامی شدت پسند تنظیموں سے تعلق رکھنے والے ہمدردوں، سہولیت کاروں کے کوائف حاصل کر لیے، ادارے نے کوائف کے حصول کیلئے جدید ٹیکنالوجی کے ساتھ آئی ٹی ماہرین کی خدمات بھی حاصل کیں تھیں، حاصل کردہ ڈیٹا میں انکشاف ہوا کہ کالعدم تنظیموں کے حامیوں کی بڑی تعداد نوجوان نسل اور اعلیٰ تعلیم یافتہ ہونے کے ساتھ بہترین تعلیمی اداروں میں موجود ہیں، جبکہ نجی اداروں میں ملازمتوں کے ساتھ سرکاری عہدوں پر تعینات افراد بھی شدت پسند تنظیموں کے حامی ہیں، انتہائی با خبر ذرائع کے مطابق سانحہ صفورا اور پاک فوج پر حملے کے بعد حساس اداروں نے دہشت گردوں کی تلاش کا کام وسیع کر دیا تھا، جس میں انکشاف ہوا کہ دونوں واقعات میں بین الاقوامی شدت پسند تنظیموں القاعدہ اور داعش کا لوکل نیٹ ورک ملوث ہے، جس پر حساس ادارے نے تحقیقات کرتے ہوئے دائرہ وسیع کیا تو چند سہولت کار حراست میں آگئے، جنہوں نے اداروں کے سامنے اہم انکشافات کیے، ذرائع نے بتایا کہ ادارے نے انکشاف کی روشنی میں جدید ٹیکنالوجی کے ساتھ آئی ٹی ماہرین کی خدمات بھی حاصل کیں او رتمام سوشل میڈیا ویب سائٹ کی جانچ شروع کر دی، ذرائع نے مزید بتایا کہ کئی روز کی جدوجہد کے بعد آئی ٹی ماہرین نے ہزاروں کی تعداد میں سوشل میڈیا ویب سائٹ کے اکائونٹ چیک کیے جن میں فیس بک، وائبر، واٹس اپ، ایموسمیت دیگر شامل ہیں، ذرائع نے کہاکہ ان اکائونٹ میں زیر تعلیم نوجوان بڑی تعداد میں شدت پسندی کی طرف راغب ہو رہے ہیں اور شدت پسندی کے کسی بھی واقعے پر اپنے تاثرات بھی درج کرتے ہیں جبکہ کہ حساس ادارے نے مذکورہ اکائونٹ ہولڈرز کے تمام کوائف حاصل کرکے ان کی نگرانی شروع کروا دی ہے، جبکہ ان میں سے چند افراد کو اگلے درجے میں رکھ کر کڑی نگرانی کی جارہی ہے۔