رینجرز اختیارات کیلئے تاجروں نے کل سندھ اسمبلی کے گھیرائو کا اعلان کردیا

December 16, 2015 9:23 pm0 commentsViews: 25

سندھ حکومت کی جانب سے رینجرز کے اختیارات بحال نہ کئے گئے تو شہر کی اہم شاہراہوں پر احتجاجی دھرنے دیں گے
جرائم کے خاتمے کیلئے رینجرز کو پورے سندھ میں کارروائی کا اختیار دیا جائے ،عتیق میر کا تاجر اتحاد کے اجلاس سے خطاب
کراچی( اسٹاف رپورٹر) کراچی کے تاجروں نے رینجرز کے اختیارات کی بحالی کے حق میں کل سندھ اسمبلی کے گھیرائو کا اعلان کر دیا، اختیارات پھر بھی بحال نہ ہوئے تو شہر کی اہم شاہراہوں پر دھرنے دینگے۔ امن کی قیمت پر کوئی دلیل قبول نہیں۔ سندھ حکومت کے امن مخالف اقدامات کی بھر پور مذمت کرتے ہیں۔ قیام امن کے تحت بے مثال کارکردگی پر پاکستان رینجرز کے قابل فخر جوانوںکو خراج تحسین پیش کرتے ہیں۔ جرائم کے خاتمے کیلئے رینجرز کو پورے سندھ میں کارروائی کا اختیار دیا جائے۔ تمام امن پسند طبقات رینجرز کو اختیارات تفویض کرنے کے حق میں اظہار رائے کے طور پر17دسمبر کے دھرنے میں شرکت کریں گے۔ موجودہ صورتحال میں آرمی چیف جنرل راحیل شریف سے مداخلت کی اپیل کرتے ہیں۔ یہ اعلان آل تاجر اتحاد کے چیئر مین عتیق میر کی زیر صدارت منگل کو آرام باغ فرنیچر مارکیٹ میں منعقد کئے گئے تاجروں کے ایک ہنگامی اجلاس میں کیاگیا۔ اجلاس میں شریک تاجر رہنمائوں اکرم رانا، طارق ممتاز ، زبیر علی خان، عبدالغنی اخوند، احمد شمشی، محمد عالم، سمیع اللہ خان، ید شرافت علی، الطاف لالہ، میر عبدالحئی خان، محمد آصف، دلشاد بخاری، عبدالقادر ، محمد عارف عبدالحکیم شاہ، عرفان اللہ، شاکر فینسی، سید محمد سعید، نسیم احمد ، سید کلیم الدین، حماد شیخ اور دیگر نے کہا کہ کسی بھی سازش کے تحت شہر کے 2013ء سے قبل کے ہولناک حالات دوبارہ مسلط کرنے کی کوشش کی گئی تو شہر موت کی وادی میں تبدیل ہو جائیگا۔ تاجروں نے یہ بھی مطالبہ کیا کہ شہر میں انصاف اور قانون کی حکمرانی اور بالا دستی قائم ہونے تک رینجرز کو تعینات رکھا جائے۔ تاجروں نے کہا کہ جو قوتیں رینجرز کے اختیارات کی مخالف ہیں انہیں مذموم مقاصد کیلئے امن کی فضا راس نہیں، زیر زمین روپوش جرائم پیشہ عناصر عوام اور تاجروں پر شب خون مارنے کیلئے رینجرز کی بے اختیاری کے منتظر ہیں۔ تاجروں نے کہا کہ بھتہ خوروں، اغوا کاروں، قاتلوں، ڈاکوئوں اور لٹیروں کو دوبارہ موقع ملا تو وہ پہلے سے زیادہ خطرناک ہوجائیں گے۔