کورنگی اور لانڈھی میں 13 ہائیڈرنٹس مسمار

December 30, 2015 4:42 pm0 commentsViews: 15

سپریم کورٹ کے احکامات کے مطابق‘ واٹر بورڈ کے حکام کا مرحلہ وار گرنیڈ آپریشن جاری
کراچی (سٹی رپورٹر)سپریم کورٹ آف پاکستان کے احکامات پر عمل کر تے ہوئے واٹر بورڈ کا زیر زمین پانی کے ہائیڈرنٹس کے خلاف گرینڈ آپریشن جاری ہے واٹر بورڈ شہر کے مختلف علاقوں میں قائم زیر زمین پانی کے 45 ہائیدرنٹس کا خاتمہ کر رہا ہے ضلع جنوبی میں ایک ،ضلع غربی میں 5، کورنگی ولانڈھی میں18 اور ضلع شرقی میں 21 ہائیڈرنٹس قائم ہیں ،منگل کے روز آپریشن کے دوسرے مرحلہ میں واٹربورڈ کی ڈیمالیشن ٹیم نے شرافی گوٹھ اور لانڈھی کورنگی پولیس کی مد د سے ہائیڈرنٹس کے خلاف بھاری مشینری کے ساتھ آپریشن کیا اور13 ایسے ہائیڈرنٹس گرائے جو صنعتی اور نواحی علاقوں میں قائم تھے۔مرتضیٰ چورنگی لانڈھی سیکٹر 29 میں عبدالصمد ہائیڈرنٹ،واجد علی ہائیڈرنٹ گرادیا گیا جس نے زیر زمین پائپ بچھا رکھے تھے اور پانی ذخیرہ کر نے کی ٹنکیاں بھی تعمیر کر رکھی تھیں ،اسی طرح کورنگی کے علاقے میں نادرعلی ہائیڈرنٹ،عبدالخالق ہائیڈرنٹ کو بھی گرادیا گیا جہاں ایک بڑا کنواں بھی تعمیر کیاگیاتھالیکن اس میں بورنگ کا پانی نہیں تھاایک ہائیڈرنٹ پر غیر قانونی طور پر واٹر بورڈ کا لو گو بھی استعمال کیا جارہا تھا ، اللہ داد گوٹھ لانڈھی میں نعیم و ارشد ہائیڈرنٹ پر بہت بڑے اسٹیل ٹینک لگا رکھے تھے اس سے منسلک تمام پائپ کو گیس کٹر سے کاٹ دیاگیا ،زیر زمین پائپ ایکسیویٹر سے کھدائی کر کے نکال لئے گئے ،اسی طرح شاہنواز اور محمد ارشد ہائیڈرنٹس کو بھی گرا دیا گیا جو لانڈھی میں کام کر رہے تھے واٹر بورڈ نے تمام سامان پر قبضہ کرلیا۔