دہشتگردی میں اعلیٰ تعلیم یافتہ افراد ملوث ہیں،چوہدری نثار

December 31, 2015 3:25 pm0 commentsViews: 26

نیشنل ایکشن پلان کی پوری ذمہ داری لیتا ہوں، دہشت گردی کیخلاف جنگ ‘منطقی انجام تک پہنچا کررہیں گے
مولانا عبدالعزیز سمیت کسی بھی عالم کے خلاف ٹھوس ثبوت پر کارروائی کی جائے گی، وزیرداخلہ کا سینیٹ میں پالیسی بیان
اسلام آباد( مانیٹرنگ ڈیسک) نیشنل ایکشن پلان پر سینیٹ میں پالیسی بیان دیتے ہوئے وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے کہا ہے کہ بحیثیت وزیر داخلہ نیشنل ایکشن پلان کی پوری ذمہ داری لیتا ہوں‘ دہشت گردی کو مدارس سے منسوخ کرنا بیرونی پروپیگنڈاہے‘ سانحہ صفورا سمیت کئی دہشت گردی کے واقعات میں اعلیٰ تعلیم یافتہ افراد ملوث ہیں‘ دہشت گردی اور طالبان میں فرق ہے‘ مدارس میں تعلیم حاصل کرنے والے طالبان ہیں اور دہشت گردی کرنے والے الگ ہیں۔ دہشت گردی کیخلاف جنگ ختم نہیں ہوئی ہے ہم منطقی انجام تک پہنچا کر رہیں گے۔ افغان مہاجرین کی مدت میں مجبوراً توسیع کرنا پڑیگی۔ دہشت گردی میں استعمال ہونیوالی غیر قانونی سمز پر موبائل کمپنی کیخلاف مقدمہ قائم کیا جائیگا‘ طالبان کے ساتھ مذاکرات میں کوئی نقصان نہیں ہوا ہے‘ مولانا عبدالعزیز کو ہم نے مسلط نہیں کیا‘ مولانا عبدالعزیز سمیت کسی بھی علماء کیخلاف ٹھوس ثبوت فراہم کئے جائیں تو کارروائی کی جائیگی۔