کراچی کے3بڑے اسپتالوں میں ایک ارب روپے کی کرپشن کا انکشاف

December 31, 2015 3:54 pm0 commentsViews: 73

دوسال کے دوران ولیکا،لیاری اور سندھ گورنمنٹ اسپتال لیاقت آباد میں ہونے والی بدعنوانیوں کے شواہد حاصل کرلئے گئے
ادویات کی خریداری کیلئے اضافی بل بنائے گئے عباسی اسپتال کی انتظامیہ کے خلاف ریکارڈ غائب کرنے پر مقدمہ درج کرنے کی سفارش
کراچی( کرائم ڈیسک) کراچی کے3 بڑے سرکاری اسپتالوں میں محض 2 سال میں ایک ارب روپے سے زائد کی کرپشن کا انکشاف ہوا ہے‘ ولیکا‘لیاری اورسندھ گورنمنٹ اسپتال لیاقت آباد میں کرپشن کے شواہد حاصل کرلئے گئے‘ ولیکا‘ لیاری اور سندھ گورنمنٹ اسپتال لیاقت آباد میں محض2 سال میں ایک ارب روپے سے زائد کی کرپشن کی گئی‘ اینٹی کرپشن نے کرپشن شواہد پر رپورٹ چیف سیکریٹری کو پیش کردی‘ رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ ولیکا اسپتال میں3 کروڑ60لاکھ کی دوائیاں خرید کر 6کروڑ40لاکھ کے بل بنائے گئے‘ اسپتال میں مختلف طبی آلات کی خریداری میں بھی4کروڑ سے زائد کی خوردبرد کی گئی‘ رپورٹ میں مزید انکشاف کیا گیا ہے کہ سندھ گورنمنٹ اسپتال کے ایم ایس ڈاکٹر انصار احمد نے غیر قانونی طور پر اکائونٹس افسران تعینات کئے اور اکائونٹ افسر معراج السلام کے ساتھ مل کر کروڑوں کی کرپشن کی جبکہ ٹینکرز سے پانی خریدنے کے نام پر 5کروڑ کی خردبرد کی اور بنا ٹینڈر ادویہ‘ آلات جراحی کی خریداری اور ہر خریداری پر10 فیصد کمیشن بھی حاصل کیا‘ کرپشن کی رپورٹ سامنے آنے کے بعد تینوں اسپتالوں کے میڈیکل سپرنٹنڈنٹس‘ اکائونٹس اور اسٹور کیپرز کیخلاف مقدمات درج کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے جبکہ عباسی شہید اسپتال انتظامیہ کیخلاف ریکارڈ غائب کرنے اور چوری کا مقدمہ درج کرنے کی سفارش کی گئی ہے۔