سلطان راہی کی20ویں برسی آج رہائش گاہ پر قرآن خوانی کی جائیگی

January 9, 2016 4:20 pm0 commentsViews: 37

1996 میں جی ٹی روڈ پر قتل کردیا گیا تھا
سلطان راہی فن کا سمندر تھے مصطفیٰ قریشی کا خراج عقیدت
کراچی( کلچرل ڈیسک) پنجابی فلموں کے شہنشاہ سلطان راہی کی آج 20ویں برسی منائی جارہی ہے‘ مرحوم سلطان راہی نے50 کی دہائی میں ایکسٹرا کے کرداروں سے فلم انڈسٹری میں کام شروع کیا‘ کئی سال سینکڑوں فلموں میں اداکاری کے بعد انہیں 70 کی دہائی میں فلم بشیرا کے ٹائٹل میں کاسٹ کیا گیا جس کے بعد بابل اور پھر شہرہ آفاق فلم ’’ مولا جٹ‘‘ 1979 ء میں منظر عام پر آئی جس کے بعد فن کے سلطان نے انڈسٹری پرجیسے قبضہ ہی کرلیا پھر 25 سال سلطان راہی پاکستانی فلم انڈسٹری پر چھائے رہے‘ فن کے سلطان نے800کے قریب فلمیں کیں جن میں سے 500 کے قریب فلموں میں مرکزی کردار اداکئے مرحوم سلطان راہی 9جنوری1996 ء کو گوجرانوالہ سے لاہور آرہے تھے کہ راستے میں جی ٹی روڈ پر انہیں قتل کردیا گیا ۔ مرحوم سلطان راہی کے جانے کے بعد پاکستانی فلم کو جو نقصان ہوا وہ آج تک پورا نہ ہوسکا‘ سلطان راہی مرحوم کے بیٹے حید ر سلطان آج اپنی رہائش گاہ پر برسی کے حوالے سے قرآن خوانی کا اہتمام کریں گے‘ مرحوم کی برسی پر سینئر فنکاروں نے مرحوم کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ مرحوم سلطان راہی گزشتہ صدی کے سب سے بڑے پنجابی ہیرو تھے جن کا خلاء کبھی پورا نہیں کیا جاسکتا‘ فلم انڈسٹری کے لیونگ اور سلطان راہی مرحوم کے ساتھی اداکار مصطفی قریشی نے اپنے خیالات کااظہار کرتے ہوئے کہا کہ سلطان راہی کا ساتھ چھوڑے 20برس بیت گئے مگر ایسا لگتا ہے کہ آج بھی ان کے ساتھ کسی فلم کی عکس بندی میں مصروف ہوں‘ وہ فن کا سمندر تھے۔