رشوت نہ دینے پر ڈیفنس پولیس کا ٹرک ڈرائیور اور کلینر پر شدید تشدد

January 11, 2016 5:51 pm0 commentsViews: 26

بوٹ بیسن پر روک کر500 روپے طلب کیے نہ دینے پر ٹرک میں گھس کر فائرنگ سے شیشے بھی توڑ ڈالے
شکایت پر پولیس نے حدود کا تنازع کھڑا کر دیا، ایس پی کلفٹن نے2 افسران کو معطل کر دیا
کراچی( کرائم رپورٹر) کالی وردی والوں کے کالے کرتوت، شہر قائد میں پولیس گروہ اپنے عروج پر پہنچ گیا۔ ڈیفنس میں ٹرک ڈرائیور اور کلیئر کو رشوت نہ دینے پر پولیس نے تشدد کا نشانہ بنا ڈالا۔ پولیس نے ہوائی فائرنگ کرکے شیشے بھی توڑ دئیے۔ تفصیلات کے مطابق کراچی پولیس کا ایک اور کارنامہ سامنے آگیا۔ ڈیفنس کے علاقے میں بوٹ بیسن کے قریب پولیس نے ٹرک ڈرائیور محمود اور کلینر دلشاد کو 500 روپے نہ دینے پر تشدد کا نشانہ بنایا اور ڈرائیور نے الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ پولیس نے ان سے پیسے مانگے، نہ دینے پر ٹرک میں بیٹھ کر ہوائی فائرنگ کر دی اور شیشے توڑ دئیے دوسری جانب ڈیفنس پولیس کا حدود کا بہانہ بنا کر واقعے سے جان چھڑاتی رہی۔ جبکہ ایس پی کلفٹن امجد حیات نے ڈیفنس تھانے کے دو افسران یوسف ناریجو اور محمد سلیم کو ان کے عہدے سے معطل کرنے کے احکامات جاری کر دئیے۔