متحدہ نے 20صوبے بنانے کی قرارداد قومی اسمبلی میں جمع کرادی

January 14, 2016 2:43 pm0 commentsViews: 21

نئے صوبوں کے ناموں اور حدود کا تعین ریفرنڈم کے ذریعے کیا جائے، قرارداد کا متن، پیٹرولیم کی قیمتیں عالمی مارکیٹ کے نرخوںکے تناسب سے کم کی جائیں
سرکاری اداروں نے 114ارب اور صارفین نے 24ارب 93کروڑ بھی واجبات ادا کئے، اسٹیل مل کی پیداوار 2سال سے بند ہے، وفاقی وزیر پانی و بجلی کا ایوان سے خطاب
اسلام آباد( نیوز ایجنسیاں) متحدہ قومی موومنٹ نے ملک میں20 صوبے بنانے کی قرار داد قومی اسمبلی میں جمع کرا دی اور قرار داد پر شیخ صلاح الدین اور فوزیہ حمید نے دستخط کئے جبکہ اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ نے حکومت سے مطالبہ کہا کہ پیٹرولیم قیمتیں عالمی نرخوں کے تناسب سے کم کی جائیں۔ تفصیلات کے مطابق بدھ کو ایم کیو ایم نے ملک میں20 صوبے بنانے کی قرار داد قومی اسمبلی میں جمع کرا دی ہے۔ یہ قرار داد ریحان ہاشمی، ساجد احمد اور محبوب عالم نے جمع کرائی۔ قرار داد کے متن میں کہا گیا ہے کہ نئے صوبوں کے ناموں اور حدود کا تعین ریفرنڈم کے ذریعے کیا جائے۔ بدھ کو قومی اسمبلی میں نکتہ اعتراض پر قائد حزب اختلاف خورشید شاہ نے کہا کہ پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں تاریخ کی کم ترین سطح پر ہیں۔ 2004ء میں عالمی منڈی میں فی بیرل تیل32 ڈالر تھی اور یہاں پیٹرول کی قیمت 62روپے فی لیٹر تھی حکومت کو چاہئے کہ بہتر حکمت عملی کے ذریعے عوام کو ریلیف دیا جائے۔ اقتصادی راہداری منصوبے کے تحت46 ارب ڈالر کی سرمایہ کاری کیلئے ہم چینی حکومت کے شکر گزار ہیں۔ علاوہ ازیں قومی اسمبلی میں وزارت پانی و بجلی نے نادہندہ سرکاری و نجی اداروں سمیت مختلف محکموں سے متعلق تفصیلات پیش کر دیں جس میں بتایا گیا کہ تمام تقسیم کار کمپنیوں نے مذکورہ اداروں اور افراد سے114 ارب روپے سے زائد کے واجبات وصول کرنے ہیں وفاقی وزیر پانی و بجلی خواجہ آصف نے قومی اسمبلی کو بتایا کہ تمام تقسیم کار کمپنیوں نے نجی صارفین سے24 ارب93 کروڑ روپے وصول کرنے ہیں وفاقی حکومت56 ارب 36 کروڑ کی نادہندہ ہے صوبائی حکومتوں نے33 ارب 15 کروڑ روپے ادا کرنے ہیں۔ حکومت کی جانب سے آگاہ کیا گیا کہ اسٹیل ملز گیس کی عدم دستیابی کی وجہ سے 2 سال سے پیداوار کے اعتبار سے مکمل طور پر بند ہے۔ لہٰذا نجکاری سمیت جو بھی فیصلہ کرنا ہے وہ فوری کیا جائے۔