پاکستانی سرحد پر بھارت نے جدید لیزر وال الارم سسٹم لگانے شروع کردیئے

January 18, 2016 2:21 pm0 commentsViews: 26

پٹھان کوٹ حملے کے بعد بھارتی حکومت نے سرحدوں پر 40مقامات پر جدید لیزروال الارم سسٹم لگانے کی منظور ی دیدی
بی ایس ایف نے ہنگامی بنیادوں پر 5سے 6مقامات پر لیزر وال نصب کردی، پٹھان کوٹ حملے میں جیش محمد ملوث ہے، بھارت پاکستان کیخلاف جوابی حملہ کرے، بی جے پی
نئی دہلی( آئی این پی) بھارتی بارڈر سیکورٹی فورسز نے در اندازی کا بہانہ بنا کر پنجاب سے ملحقہ سرحد کے مختلف مقامات پر لیزر وال لگانے کاکام شروع کر دیا ہے۔ بھارتی میڈیا کے مطابق بھارتی بارڈر سیکورٹی فورس نے پاکستان سے ملحقہ سرحد کے40 مقامات پر جدید ترین لیزر وال لگانے کا کام شروع کر دیا ہے۔ یہ لیزر وال پاکستان کے صوبے پنجاب میں داخل ہونے والے ان دریائوں اور نہروں کی گزر گاہوں پر لگائی جا رہی ہیں جہاں مخصوص باڑ نہیں لگائی جا سکتیں۔ بی ایس ایف نے ابتدائی طور پر 5 سے6 مقامات پر لیزر وال نصب بھی کر دی ہے۔ پٹھان کوٹ ایئر بیس پر حملے کے بعد بھارتی وزارت داخلہ نے مخصوص مقامات پر ہنگامی طور پر لیزر وال لگانے کی منظوری دی ہے۔ لیزر وال جدید ترین الارم سسٹم سے لیس ہے، کسی چیز کے اس لیزر وال سے گزرنے کی صورت میں فوری طور پر سائرن بجنا شروع ہوجائیں گے۔ بھارتی میڈیا نے دعویٰ کیا کہ پٹھان کوٹ ایئر بیس پر حملہ کرنے والے بامیال سے دریائے اج پار کرکے داخل ہوئے تھے۔ اس مقام پر لیزر وال نہ ہونے کی وجہ سے ہی بھارتی حکام کو حملہ آوروں کے داخلے کا علم نہیں ہو سکا تھا تاہم ان کے دعوے کی تردید اس بات سے بھی ہوتی ہے کہ بی ایس ایف کی جانب سے وہاں نصب انتہائی جدید ترین کیمرے بھی ان کی کوئی فوٹیج حاصل نہیں ہو سکی۔ بھارتی حکمران جماعت بی جے پی کے رہنما سبرامنیم سوامی نے کہا ہے کہ پٹھان کوٹ ایئر بیس پر حملہ دہشت گردانہ حملے کے بعد بھارت پاکستان کے خلاف بھر پور جوابی کارروائی کرے۔ انہوں نے کہا کہ حملے میں جیش محمد ملوث ہے۔ سابق مرکزی وزیر نے پاکستان کے حوالے سے وزیر اعظم نریندر مودی کی پالیسی کی حمایت کی۔