آج صبح، ڈیفنس میں جعلی پولیس مقابلے میں زخمی ہونیوالا شہری ہلاک

January 18, 2016 2:23 pm0 commentsViews: 31

پولیس اہلکاروں نے گزشتہ رات موٹر سائیکل سوار شہریار کو فائرنگ کرکے زخمی کردیا تھا اور مقابلہ قرار دیا تھا
تحقیقات کے بعد مقابلہ جعلی قرار دے کر دو پولیس اہلکاروں کو گرفتار کرلیا گیا، مقتول لانڈھی کا رہائشی تھا
کراچی( کرائم رپورٹر) ڈیفنس میں گذری تھانے کی حدود میں گزشتہ رات جعلی پولیس مقابلے میں زخمی ہونے والا لانڈھی کا رہائشی نوجوان شہر یار آج صبح جناح اسپتال میں دم توڑ گیا۔ پولیس افسران نے تحقیقات کے بعد پولیس مقابلے کو جعلی قرار دیکر 2 اہلکاروں کو گرفتار کرکے ایف آئی آر درج کرنے کا حکم دیا۔ تفصیلات کے مطابق گذری پولیس اسٹیشن کی حدود ڈیفنس خیابان تنظیم پر پولیس اہلکاروں نے موٹر سائیکل سوار پر گزشتہ رات اچانک فائرنگ کر دی جس کے نتیجے میں ایک نوجوان شہریار شدید زخمی ہوگیا جس کو جناح اسپتال لے جایا گیا۔ جہاں پر وہ آج صبح زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسا۔ اہلخانہ اور دوستوں کے مطابق شہریار اپنے ساتھیوں کے ہمراہ سی ویو جا رہا تھا۔ شہریار لانڈھی کا رہائشی ہے اور لیتھ مشین کا کام کرتا ہے۔ جرائم پیشہ نہیں تھا۔ پولیس افسران نے اہل خانہ اور دوستوں کی درخواست پر تحقیقات کی تو پولیس مقابلہ جعلی ثابت ہوا، جبکہ دوسری جانب گرفتار پولیس اہلکاروں کا کہنا ہے کہ خیابان تنظیم پر شہریار اپنے ساتھیوں کے ہمراہ راہ گیروں سے لوٹ مار کر رہا تھا۔ اس دوران پولیس کو دیکھتے ہی اس نے فائرنگ کر دی جوابی کارروائی میں شہریار زخمی ہوا۔ واضح رہے کہ گذری پولیس اسٹیشن کی حدود میں چند روز قبل ذکریا نامی نوجوان پولیس مقابلے میں ہلاک ہوا تھا عینی شاہدین کے مطابق گزشتہ رات گذری پولیس اہلکاروں نے موٹر سائیکل سوار شہریار کو قریب آتے ہی فائرنگ کا نشانہ بنایا۔