فیصل کنٹونمنٹ بورڈ میں فراہمی و نکاسی آب کی شکایتوں میں اضافہ

January 18, 2016 2:55 pm0 commentsViews: 205

شکایتوں کو واٹربورڈ انسانی ہمدردی کی بنیاد پر حل کرنے کی کوشش کرتا ہے، مصباح فرید
کراچی( سٹی رپورٹر)کراچی واٹراینڈ سیوریج بورڈ کے منیجنگ ڈائریکٹر مصباح الدین فرید نے ایگزیکٹو آفیسر فیـصل کنٹونمنٹ بورڈ کی توجہ فیصل کنٹونمنٹ بورڈ فیصل کے زیر انتظام علاقوں میں پانی و سیوریج کی شکایات کی جانب مبذول کراتے ہو ئے کہا ہے کہ واٹر بورڈ کو تمام کنٹونمنٹ بورڈز کے علاقوں کے بارے میں متعدد شکایات مو صول ہوتی ہیںجن کو واٹر بورڈ انسانی ہمدردی کی بنیاد پر حل کر نے کی پوری کو شش کر تا ہے تاکہ فیصل کنٹونمنٹ بورڈ اور دیگر کنٹونمنٹ بورڈ کی حدود میں رہائش پزید مکینوںکو پانی و سیوریج کی پریشانیوںسے نجات مل سکے اور ان کی پانی و سیوریج کی شکایات کا ازالہ کیاجاسکے،انہوں نے کہا کہ جب ان شکایات کوحل کر نے میں دیر ہوتی ہے تو فیصل کنٹونمنٹ بورڈ سمیت دیگر کنٹونمنٹ بورڈ ز کے زیرانتظام علاقوں میں پانی و سیوریج کی شکایات میں اضافہ ہو جاتا ہے واٹر بورڈ کی کو شش ہو تی ہے کہ ملنے والی شکایات کو فوری طور پرحل کیاجائے ،انہوں نے کہا ہے کہ فیصل کنٹونمنٹ بورڈ کی حدود میں واقع گلستان جوہر، گلشن جمال، ناتھا خان گوٹھ، KDAOCS،DOHSاور ملحقہ علاقوں میں جہاں تمام ترقیاتی ،مرمتی ،دیکھ بھال اور لیز کا کام کنٹونمنٹ بورڈ خود انجام دیتا ہے جبکہ بنیاد ی سہولیات جن میں پانی و سیوریج شامل ہے اس کی فراہمی بھی فیصل کنٹونمنٹ بورڈ کی ذمہ داری ہے کنٹونمنٹ بورڈ ہی ان علاقوں سے تمام ٹیکس بھی وصول کرتا ہے ،لیکن فیصل کنٹونمنٹ بورڈ سمیت دیگر کنٹونمنٹ بورڈز کو واٹر بورڈ کے زیر انتظام علا قوں کی سیوریج کی نکا سی اور پا نی کی فراہمی کو ممکن بنا تا ہے جس کی مینٹیی نینس پر کثیر رقوم صرف ہو تی ہے لیکن تمام کنٹونمنٹ بورڈ کی جا نب سے کثیر المنزلہ عما رتوں کے نقشوں کی منظوری واٹر بورڈ کی NOCسے مشروط نہیں ہو تی اور کو ئی بھی کنٹونمنٹ بورڈ واٹر بورڈ کو انفرا اسٹرکچر کی مد میں بیٹر منٹ یا کمر شلائزیشن چارجز ادا نہیں کر تا جو واٹر بورڈ کا قا نو نی حق ہے جبکہ واٹر بورڈ کو فراہمی و نکا سی آب کے ہزاروں کلو میٹر طویل پیچیدہ ٹرنک مین ، ڈسٹری بیوشن اور بلک سسٹم کے نظا م کی انسٹا لیشن چلا نے اور دیکھ بھا ل پر اخراجات کر نا ہو تے ہیں جن کو Maintain کر نا واٹر بورڈ کے لئے انتہا ئی مشکل ہو تا جا رہا ہے ۔