کراچی ایئرپورٹ پر خواتین کو فحاشی کیلئے بیرون ملک بھجوانے والا گروہ سرگرم

January 18, 2016 3:01 pm0 commentsViews: 40

گینگ مجبور خواتین کو بیوٹی پارلر اور دیگر پرکشش ملازمت کے جھانسے دیکر لے جاتے ہیں، ایئرپورٹ کا عملہ بھی ملوث
میرے شوہر نے معالات طے ہونے پر مجھے نسرین اور شکور کے حوالے کیا، جنہوں نے میرا پاسپورٹ باآسانی بنوایا،ایئرپورٹ عملے سے گروہ کے اچھے تعلقات ہیں، بخت بی بی کے انکشافات
کراچی( اسٹاف رپورٹر) باپ کے ہاتھوں اغواء ہونیوالے بچوں کی ماں بخت بی بی نے دبئی اسمگل ہونے سے لے کر نیٹ ورک کے بارے میں اہم معلومات تحقیقاتی ادارے کو دے دیں‘ دبئی میںفحاشی کا دھندا کروانے والا گینگ مجبوراً خواتین کو بیوٹی پارلر اور دیگر پرکشش ملازمت کے جھانسے دے کر لے جاتا ہے‘ کراچی ایئر پورٹ پر گینگ کا مضبوط نیٹ ورک موجود ہے جو ہینڈلر کو تحفظ دینے کے ساتھ تمام معاملات بھی دبا لیتا ہے‘تحقیقاتی ادارے نے خاتون کے انکشافات کے بعد کراچی ایئر پورٹ کے نیٹ ورک کیخلاف بھی شواہد حاصل کرنا شروع کردیئے‘ ذرائع نے دعویٰ کیا کہ ادارے نے سی سی ٹی وی فوٹیج سے ہینڈلرملزمہ اور ملزم کی ویڈیو حاصل کرلی ہیں‘ ذرائع کے مطابق پیر آباد پولیس کے ہاتھوں گرفتار ملزم سعید کی اہلیہ بخت بی بی نے تحقیقاتی ادارے کو دبئی اسمگل ہونے سے لے کر وہاں موجود تمام نیٹ ورک کے بارے میں سنسنی خیز معلومات فراہم کردی ہیں‘ بخت بی بی نے بتایا کہ میرے شوہر نے تمام معاملات طے کرنے کے بعد ایک عورت نسرین اور اس کے ساتھی شکور سے ملوایا جس نے مجھے دیکھنے کے بعد ساتھ لے جانے کی حامی بھری اور میری تصاویر لینے کے ساتھ ضروری دستاویزات بھی لے لیں بعد ازاں دونوں مجھے پاسپورٹ آفس لے گئے جہاں سے میرا پاسپورٹ بنوایا گیا اس پر دبئی کا تفریح ویزہ لیا گیا جس کی مدت3 ماہ تھی‘ نسرین اور ساتھی شکور مجھے اور تمام لڑکیوں کو لے کر ایئر پورٹ پہنچے جہاں پر تعینات عملے کی جانب سے کوئی سوال نہیں پوچھا گیا بلکہ نسرین اور شکور سے انتہائی ملنساری سے ملے اور کچھ شکوے بھی کئے‘تحقیقاتی ادارے نے خاتون کے بیان کے بعد تفتیش کا دائرہ مزید وسیع کردیا ہے اور خواتین کواسمگل کرکے فحاشی کا دھندا کروانے والے گینگ کیخلاف گھیرا تنگ کرنا شروع کردیا ہے‘ ذرائع نے کہا کہ تحقیقاتی ادارے نے خاتون کی نشاندہی پر چند مقامات پر چھاپے بھی مارے ہیں تاہم کوئی گرفتاری عمل میں نہیں آسکی۔