پاکستان، بھارت اور بنگلہ دیش کے 25 فیصد لوگ غذائی قلت کا شکار

January 18, 2016 3:34 pm0 commentsViews: 79

2014سے لے کر تاحال کم غذا ملنے سے کئی لوگ موت کے منہ میں چلے گئے، افریقہ میں 35 فیصد آبادی بھوک کا شکار
چین، روس، امریکا، سعودی عرب، ایران اور ملائیشیا کے 5فیصد لوگ بھی غذائی کمی کا شکار ہیں
نیو یارک( اے این این) 2014سے 2016 کے دوران ضرورت سے کم غدا ملنے پر کئی ملکوں میں شہریوں کی موت واقع ہوئی۔ ایک رپورٹ کے مطابق پاکستان اور بھارت میں غذائی قلت کی شرح15 سے25 فیصد تک رہی۔ جبکہ اس دوران افریقی ملکوں میں غدائی قلت کی بد ترین صورتحال سامنے آئی۔ ورلڈ فوڈ پروگرام کے جاری کئے گئے نقشے کے مطابق 2014 سے 2016 کے دوران افریقی ملکوں میں غذائی قلت کی شدید صورتحال سامنے آئی، سینٹرل افریقین ری پبلک، نیمبیا اور زیمبیا میں35 فیصد سے زائد آبادی کو ضرورت سے کم غذا ملی، افغانستان اور جنگ کا شکار یمن میں25 سے35 فیصد کی آباد کو کم غذا ملی، بھارت، پاکستان، بنگلہ دیش اور عراق سمیت کئی ملکوں میں15 سے25 فیصد آبادی غذائی قلت کا شکار ہوئی۔ چین، انڈونیشیا، نیپال اور سری لنکا میں صورتحال تھوڑی بہت نظر آئی۔ جہاں 5 سے 15 فیصد افراد کو غذائی قلت کا سامنا رہا، روس، امریکا، سعودی عرب ، ایران اور ملائیشیا میں5 فیصد سے کم افراد غذائی قلت کا شکار ہوئے۔