پراسیکیوشن بل کالا قانون ہے، آزاد عدلیہ منسوخ کردیگی، غوث علی شاہ

January 18, 2016 3:40 pm0 commentsViews: 31

بل پاس کرکے پیپلزپارٹی اپنی صفوں میں موجود کرمنلز کو تحفظ دینا چاہتی ہے
یہ غریب کے خلاف استعمال ہوگا، لوٹ مار میں ملوث لوگ فائدہ اٹھائیں گے
کراچی( اسٹاف رپورٹر) سابق وزیر اعلیٰ سندھ اور مسلم لیگ ن کے رہنما سید غوث علی شاہ نے سندھ اسمبلی میں پراسیکیوشن کے قانون میں ترمیم اور پراسیکیوٹر تبدیل کرنے کا اختیار پراسیکورٹر جنرل کو دینے کے بل کی منظوری کی مذمت کرتے ہوئے اسے کالا قانون قرار دیا ہے۔ اور اسے فوری منسوخ کرنے کا مطالبہ کیا ہے بل پاس کرا کر پیپلز پارٹی اپنی صفوں میں موجود کریمنلز کو تحفظ دینا چاہتی ہے لیکن پاکستان کی آزاد عدلیہ اس بل کو منسوخ کر دے گی۔ اتوار کو اپنے بیان میں غوث علی شاہ نے کہا کہ سندھ اسمبلی سے جو بل پاس کرایا گیا ہے وہ عدل و انصاف کی راہ میں رکاوٹ ہے۔ یہ بل غریب عوام کے خلاف استعمال ہوگا اور جو لوگ لوٹ مار میں ملوث ہیں مجموعی طورپر اس بل کا فائدہ وہی لوگ اٹھا سکیں گے۔ غوث علی شاہ نے کہا کہ عدلیہ کو آزادانہ طور پر کام کرنے دیا جائے اور عدالتی کام میں مداخلت نہ کی جائے۔ انہوں نے کہا کہ اپوزیشن جماعتوں کی جانب سے اس بل کی مخالفت درست ہے۔ پیپلز پارٹی سندھ اسمبلی میں اکثریت کی بنیاد پر من مانے فیصلے کرنا چاہتی ہے جس کی کسی طور پر اجازت نہیں دی جا سکتی۔