ایشیاء کی سب سے بڑی سبزی منڈی میں کرپشن کا بازار گرم

January 19, 2016 5:30 pm0 commentsViews: 41

سالانہ18 کروڑ کی فیس اور وہیکل ٹیکس کی وصولی کے باوجود مارکیٹ پر کوئی رقم نہیں لگائی جاتی
کراچی( یو پی پی) ایشیا کی سب سے بڑی سبزی منڈی میں کرپشن کا بازار گرم ہے۔ سالانہ18 کروڑ کی فیس اور وہیکل ٹیکس وصولی کے باوجود بھی مارکیٹ پرسالانہ18 لاکھ تک بھی نہیں لگائے جاتے۔ سبزی منڈی میں سڑک ہے، پانی ہے اور نہ ہی بجلی ہے۔ تفصیلات کے مطابق پندرہ برس قبل کراچی کی سبزی منڈی کو شہر سے باہر سپر ہائی وے منتقل کیا گیا تھا جہاں ان کو وسائل اور ان گنت سہولیات فراہم کرنے کے دعوے کیے گئے مگرسبزی منڈی میں داخل ہوتے ہی ڈھول کا پول کھل جاتا ہے۔ سو ایکڑ پر پھیلی سبزی منڈی میں 15 برسوں میں ایک سڑک بھی نہ بن پائی۔ ہزاروں دکانوں میں بجلی کے کنڈے چل رہے ہیں اور پانی کا تو نام ونشان نہیں ہے۔ ان مسائل کے حل کے لیے مارکیٹ کمیٹی بنائی گئی جو تاجروں کی مشکلات سے بے پروا ہوکر سالانہ فیس اور وہیکل ٹیکس سے جیبیں بھرنے میں مصروف ہے۔