الطاف حسین سمیت متحدہ کے20رہنمائوں کی گرفتاری کا حکم

January 19, 2016 6:06 pm0 commentsViews: 18

انسداد دہشت گردی عدالت میں شاہ لطیف ٹائون تھانے میں درج اشتعال انگیز تقریر کے مقدمے کی رپورٹ پیش کردی گئی
سندھ ہائی کورٹ کے نامزد میئر کراچی وسیم اختر کی 2مقدمات میں عبوری ضمانت منظور کرلی
کراچی( اسٹاف رپورٹر) انسداد دہشت گردی کی عدالت نے اشتعال انگیز تقریر کے ایک مقدمے میں ایم کیو ایم کے قائد الطاف حسین سمیت20 رہنمائوں کے نا قابل ضمانت وارنٹ جاری کرتے ہوئے انہیں گرفتارکرنے کا حکم دیا ہے‘ جبکہ سندھ ہائی کورٹ نے اشتعال انگیز تقاریر کے2 مقدمات میں نامزد میئر کراچی وسیم اختر کی عبوری ضمانت منظور کرلی‘ تفصیلات کے مطابق پیر کو انسداد دہشت گردی کی عدالت میں شاہ لطیف ٹائون تھانے میں الطاف حسین اور دیگر متحدہ رہنمائوں کیخلاف درج اشتعال انگیز تقریر کے مقدمے میں پولیس کی جانب سے رپورٹ پیش کی گئی‘ عدالت کو بتایا گیا کہ کچھ ملزمان ملک سے باہر ہیں اور کچھ درج کردہ پتے پر موجود نہیں ہیں‘ لہٰذا گرفتاری کیلئے مہلت دی جائے‘ عدالت نے پولیس کو مہلت دیتے ہوئے الطاف حسین‘ وسیم اختر‘ فاروق ستار‘ خالد مقبول‘ خواجہ اظہار الحسن‘ قمر منصور ‘سلمان بلوچ اور سینیٹر سیف یار خان سمیت 20 رہنمائوں کے نا قابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کرتے ہوئے گرفتار کرنے کا حکم دیا ہے‘ دریں اثناء سندھ ہائی کورٹ کے جسٹس احمد علی شیخ کی سربراہی میں2 رکنی بنچ نے متحدہ کے رہنما اور نامزد میئر کراچی وسیم اختر کی تھانہ سہراب گوٹھ اور سپر ہائی وے انڈسٹریل ایریا میں ٹیلی گرافٹ ایکٹ اور غداری ایکٹ کے تحت درج مقدمات میں عبوری ضمانت میں یکم فروری تک توسیع کردی۔