پیپلزپارٹی کیخلاف بڑے احتجاج کا وقت قریب آرہا ہے،ڈاکٹر فاروق ستار

January 20, 2016 3:24 pm0 commentsViews: 20

بلدیاتی اداروں کی مخصوص نشستوں اور چیئرمین و ڈپٹی چیئرمین کے الیکشن میں پیپلزپارٹی دھاندلی کے منصوبے بنارہی ہے
چیف الیکشن کمشنر اور وزیراعظم کے علاوہ ہر انتخاب سیکرٹ بیلٹ کے ذریعے ہوتا ہے یہ آئین میں موجود ہے، پیپلزپارٹی نے میئر اور ڈپٹی میئر کے لیے ہاتھ اٹھا کر انتخاب کرنے کا بل منظور کرکے آئین کی خلاف ورزی کی ہے
پیپلزپارٹی ایسا اس لیے کررہی ہے کہ دیکھا جاسکے جن لوگوں کو اس نے خریدا ہے وہ اسے ووٹ دے بھی رہے ہیں یا نہیں، احتجاج کے لیے ن لیگ نے ہمارا ساتھ دینے کا یقین دلایا ہے، متحدہ کے رہنمائوں کی پریس کانفرنس
کراچی( اسٹاف رپورٹر) متحدہ قومی موومنٹ کے رہنما ڈاکٹر فاروق ستار نے کہاہے کہ سندھ میں پیپلز پارٹی کے خلاف بڑے پیمانے پر احتجاج کا وقت قریب آرہاہے ۔پیپلز پارٹی نے سندھ اسمبلی میں بلدیاتی اداروں کی مخصوص نشستوں میں میئر، ڈپٹی میئر اور چیئر مینوں کے انتخاب کیلئے ہاتھ اٹھا کر ووٹ دینے کا بل منظور کر کے آئین کی خلاف ورزی کی ہے پاکستان پیپلز پارٹی کا رویہ جمہوریت سے انتقام لینے والا ہے۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ مخصوص نشستوں کے جو الیکشن ہیں ان کا عمل سیکرٹ بیلٹ کے ذریعے ہی کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ الیکشن کمیشن اور وفاقی حکومت بھی اس کا نوٹس لے جو کہ جمہوریت کی مالا جپتے ہیں، ان کا بھی چہرہ ایکسپوز ہو رہا ہے۔ ہاتھ اٹھا کر انتخابات اس لئے کرایا جارہا ہے تا کہ پیپلز پارٹی جن کو خرید رہی ہے ان کو دیکھا جائے کہ آیا وہ انہیں ہی ووٹ دے رہے ہیں کہ نہیں؟ انہوں نے کہا کہ چیف الیکشن کمشنر وزیر اعظم کے انتخابات کے علاوہ تمام انتخابات سیکرٹ بیلٹ کے ذریعے ہونگے یہ آئین پاکستان میں ہے۔ انہوں نے کہا کہ قانون سازی کھیلنے کی چیز نہیں کہ جس کے ذریعے ایک ہی قانون صرف ایک سال کے دوران تین مرتبہ تبدیلی کیا جائے۔ احتجاج کیلئے مسلم لیگ ن نے ہمارا ساتھ دینے کا یقین لایا ہے عمران خان، سراج الحق نے وعدہ نہیں کیا لیکن ان کی جانب سے یہ کہا جا رہا تھا کہ وہ غیر جانبدار رہیں گے، اب وقت آرہا ہے کہ کوئی وسیع تر احتجاج کرکے پیپلز پارٹی اور اس قسم کے ہتھکنڈوں سے باز رکھا جائے اور سندھ کے شہری عوام ذہبی طور پر تیار ہیں جس دن الطاف بھائی رابطہ کمیٹی کی تجویز کو انڈوز کر یں گے تو آپ دیکھیں گے کہ عوام کی بڑی اکثریت کے ساتھ احتجاج ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ ایم کیو ایم سندھ کی دوسری بڑی جماعت ہونے کے ناطے اس دھاندلی کے خلاف عدالت میں جانے کیلئے تیار ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ایم کیو ایم کی رابطہ کمیٹی کے رکن عارف خان ایڈووکیٹ، کراچی کیلئے نامزد میئر وسیم اختر، ڈپٹی میئر ارشد وہرہ اور سندھ اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر خواجہ اظہار الحسن کے ہمراہ خورشید بیگم سیکریٹریٹ عزیز آباد میں پریس کانفرنس سے خطاب کے دوران کیا۔ ڈاکٹر محمد فاروق ستار نے کہا کہ پاکستان پیپلزپارٹی بلدیاتی انتخابات کی مخصوص نشستوں کے انتخابات میں دھاندلی کے منصوبے بنا رہی ہے اور دھاندلی منصوبے کو عملی جامہ پہنانے کیلئے جبر، لالچ، پولیس و انتظامیہ اور قانون سازی جیسے عمل کو استعمال کر رہی ہے انہوں نے کہا کہ تاخیری حربے جو استعمال کئے جا رہے ہیں اس کے پیچھے بھی مذمو مقاصد ہیں جس کے تحت آج بلدیاتی قانون2013میں اس قسم کی تیسری ترمیم کی گئی ہے۔