اپیکس کمیٹی کا سندھ میں 10فوجی عدالتیں قائم کرنے کا اعلان

January 20, 2016 4:03 pm0 commentsViews: 15

اقتصادی راہداری کے تحفظ کیلئے دو ہزار اور گواہوں کے تحفظ کیلئے 200اہلکاروں پر مشتمل علیحدہ علیحدہ فورسز تشکیل دی جائیں گی
مذہبی رواداری کے لئے ضلعی سطح پر امن کمیٹیاں بھی قائم ہوں گی ،تاجروں کے تحفظات دور کرنے کے لئے بھی کمیٹی بنائی جائے گی
کراچی( اسٹاف رپورٹر) سندھ اپیکس کمیٹی نے اقتصادی راہداری کے تحفظ کیلئے2 ہزار گواہوں کے تحفظ کیلئے 200 اہلکاروں پر مشتمل دو الگ الگ فورسز تشکیل دینے کا فیصلہ کیا ہے۔ 25 مقدمات فوجی عدالتوں میں بھیجے جائیں گے جبکہ تین مقدمات پر پہلے ہی کارروائی شروع ہو چکی ہے۔ آئندہ چند ہفتوں میں سندھ میں10 فوجی عدالتیں اپنا کام شروع کر دیں گی۔ فوجی عدالتوں کیلئے جگہ کور کمانڈر کراچی نے فراہم کرنے کی یقین دہانی کرائی ہے جبکہ گواہوں کے تحفظ کیلئے سیف ہائوسز بھی قائم کئے جائیں گے جبکہ مذہبی رواداری کیلئے ضلعی سطح پر امن کمیٹیاں قائم کی جائیں گی تاجر رہنما عقیل کریم ڈیڈھی کے حوالے سے تاجروں کے تحفظات دور کرنے کیلئے کمیٹی تشکیل دی جائے گی۔ اب صرف عام مجرم ہی نہیں بلکہ ان کے سرپرست اور ماسٹر مائنڈ بھی پکڑے جائیں گے۔ یہ فیصلے منگل کو وزیر اعلیٰ ہائوس میں وزیر اعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ کی زیر صدارت اپیکس کمیٹی کے اجلاس میں کئے گئے اجلاس میں گورنر سندھ، کور کمانڈر کراچی ، کراچی ڈی جی رینجرز، وزیر داخلہ سندھ چیف سیکریٹری اور آئی جی سندھ پولیس غلام حیدر جمالی سمیت دیگر اعلیٰ حکام نے شرکت کی۔ اجلاس کے بعد مشیر اطلاعات سندھ مولا بخش چانڈیو نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ایپکس کمیٹی اجلاس کے فیصلوں کا اعلان کیا۔ انہوں نے بتایا کہ آج کے اجلاس میں فیصلہ ہوا ہے کہ جس طرح موبائل سمز پر نظر رکھی جائے گی اسی طرح اب ایوو پر بھی نظر رکھی جائے گی، اب صرف مجرموں کو ہی نہیں بلکہ ان کے ماسٹر مائنڈ اور ان کے سرپرستوں کو بھی پکڑا جائے گا۔