سندھ ہائی کورٹ میں تاخیر سے پہنچنے پر آئی جی کی سرزنش

January 20, 2016 4:36 pm0 commentsViews: 24

آئی جی صاحب آپ ایک ذمہ دار افسر ہیں اپنی وردی کی لاج رکھیں، عدالت کے ریمارکس
بنچ کے رکن جسٹس عبدالکریم آغا نے ذاتی وجوہات کی بنا پر توہین عدالت کیس کی سماعت سے معذرت کر لی
کراچی( اسٹاف رپورٹر) سندھ ہائی کورٹ میں توہین عدالت کیس کی سماعت‘ آئی جی سندھ غلام حیدر جمالی کے وقت پر عدالت میں نہ پہنچنے پر عدالت کا اظہار برہمی‘ سندھ ہائی کورٹ میں توہین عدالت کیس کی سماعت جسٹس منیب اختر اور جسٹس کریم خان آغا پر مشتمل 2 رکنی بنچ نے کی‘ سماعت پر آئی جی سندھ غلام حیدر جمالی‘ ایڈیشنل آئی جی غلام قادر تھیبو‘ ڈی آئی جی فیروز شاہ‘ ایس ایس پی فدا حسین اور ایس ایس پی فیصل بشیر میمن سمیت 8 افسران عدالت میں پیش ہوئے‘3 افسران ایس پی چوہدری اسد‘ ایس پی طاہر نورانی اور رئیس عبدالغنی کے نہ پیش ہونے پر عدالت نے برہمی کاا ظہار کیا جس پر عدالت کو بتایا کہ ایس پی چوہدری اسد کے عزیز کا انتقال ہوگیا ہے جبکہ ایس ایس پی رئیس عبدالغنیکے صاحبزادے آئی سی یو میں ہیں‘ درخواست غیر حاضری عدالت میں پیش کی گئی‘ عدالت نے دونوں افسران کی درخواست منظور کرتے ہوئے ایڈیشنل آئی جی ٹریفک طاہر نورانی کی عدم موجودگی پر برہمی کا اظہار کیا‘ عدالت نے آئی جی سندھ غلام حیدر جمالی سے استفسار کیا کہ آپ وقت پر کیوں نہیں آئے‘ جس پر آئی جی کا کہنا تھا کہ وقت کا علم نہیں تھا‘ عدالت نے ریمارکس دیئے کہ آپ ایک ذمہ دار افسر ہیں اپنی وردی کی لاج رکھیں‘ دوران سماعت بنچ کے رکن جسٹس عبدالکریم آغا نے ذاتی وجوہات کی بناء پر توہین عدالت کیس کی سماعت سے معذرت کی جس پرسماعت 17 فروری تک ملتوی کردی۔