پنجاب اور خیبرپخوانخوا میں بجلی کا بریک ڈائون، قومی اسمبلی اندھیرے میں ڈوب گئی

January 22, 2016 4:46 pm0 commentsViews: 20

گدو پاور اسٹیشن میں آتشزدگی کے باعث ملک کے بیشتر علاقے اندھیرے میں ڈوب گئے ،غازی بروتھا، تربیلا،منگلا کے پاور اسٹیشن بھی ٹرپ کر گئے
بجلی معطل ہونے پر ارکان اسمبلی کے حکومت مخالف نعرے، اسپیکر قومی اسمبلی کی فوری جنریٹر چلانے کی ہدایت، بجلی جانے کے معاملے کی تحقیقات کا حکم دیدیا گیاہے
اسلام آباد ( نیوز ایجنسیاں) گدو پاور اسٹیشن میں آتشزدگی کے باعث ملک کے بیشتر علاقوں میں بجلی کا بریک ڈائون ہوا جس سے پنجاب، خیبر پختونخوا اور وفاقی دار الحکومت کے مختلف علاقے متاثر ہوئے۔ قومی اسمبلی ایوان بھی اندھیرے میں ڈوب گیا۔ جس پر ارکان نے شور شرابہ کیا اور حکومت مخالف نعرے لگائے گدو میں فنی خرابی کے باعث منگلا، تربیلا اور غازی بروتھا پروجیکٹ سے بجلی کی ترسیل صفر ہوگئی۔ سرکاری و نجی ٹی وی کے مطابق شام تک بریک ڈائون سے متاثرہ90 فیصد علاقوں کو بجلی کی سپلائی بحال کر دی گئی۔ تفصیلات کے مطابق جمعرات کے روز سہ پہر 3بجے فنی خرابی کے باعث گدو تھرمل پاور ہائوس کے500 کے وی گرڈ اسٹیشن کے ٹی تھری ٹرانسفارمر میں آگ لگ گئی۔ جس کے باعث تربیلا، منگلا، غازی بروتھا پاور اسٹیشنز بھی ٹرپ کر گئے۔ جبکہ لاہور اور شیخو پورہ میں بجلی کی فراہمی مکمل طور پر معطل ہوگئی۔ ذرائع کے مطابق فنی خرابی کے باعث نارتھ زون میں آنے والے علاقوں، ملتان، لاہور، فیصل آباد ، راولپنڈی، اسلام آباد، اٹک، جہلم، گوجرانوالہ، سرگودھا، ملتان، کشمیر اور پشاور سمیت مختلف شہروں میں بجلی بند رہی۔ ٹرانسفارمر میں آگ پر کندھ کوٹ اور کشمور سے فائر بریگیڈ منگوا کر قابو پایا گیا۔ بجلی کی فراہمی معطل ہوجانے پر قومی اسمبلی کا ایوان بھی تاریکی میں ڈوب گیا۔ جس پر اپوزیشن اراکین نے بجلی کی معطلی پر شدید شور و شرابا کیا اور حکومت مخالف نعرے بازی کی جس کے بعد اسپیکر قومی اسمبلی نے فوری جنریٹر چلانے کی ہدایت کی بجلی جانے کے معاملے کی انکوائری کا حکم دے دیا۔