کراچی میں، بغیر نمبر پلیٹ پولیس موبائلوں نے لوٹ مار کا بازار گرم کردیا

January 22, 2016 5:11 pm0 commentsViews: 31

جعلی پولیس مقابلوں اور چھاپوں کے دوران اہلکار چہرے ڈھانپے ہوئے ہوتے ہیں، کسی بھی شہری کو حراست میں لیکر گھر والوں سے لاکھوں روپے طلب کئے جاتے ہیں
شہر میں دہشتگردوں، جرائم پیشہ افراد کیخلاف کارروائیوں کیلئے جانیوالی موبائلوں پر صرف SPلکھا ہوتاہے، تلاشی کے دوران گھروں سے لاکھوں روپے بھی لوٹ لیتے ہیں
کراچی( کرائم ڈیسک) کراچی کے مختلف علاقوں میں دہشت گردوں جرائم پیشہ افراد‘ ٹارگٹ کلنگ میں ملوث ملزمان‘ اسٹریٹ کرمنل اور دیگر ملزمان کی گرفتاری کیلئے چھاپے مارنے والی پولیس پارٹیوں نے بغیر نمبر پلیٹ والی پولیس موبائلوں کا استعمال شروع کردیا ہے جس سے پورے شہر میںخوف وہراس پایا جاتا ہے بغیر شناخت والی پولیس موبائلوں میں سوار افراد خود کو پولیس اہلکار ظاہر کرتے ہیں اور چھاپوں کے وقت گرفتاری کے ساتھ گھروں میں لوٹ مار بھی کرتے ہیں‘ ایسے پولیس اہلکاروں نے اپنی پولیس موبائلوں کے آگے کی نمبر پلیٹ نکالی ہوئی ہے جبکہ پیچھے کی نمبر پلیٹ پر صرف SPلکھاہوتا ہے باقی نمبروں پر کلر کرکے مٹادیئے گئے ہیں‘ شہر میں ہونیوالے پولیس مقابلوں میں بھی بغیر نمبر پلیٹ پولیس موبائلیں استعمال کی جاتی ہیں‘ ایک پولیس اہلکار نے بتایا کہ ہم دہشت گردوں کیخلاف جدوجہد کررہے ہیں اور شناخت ظاہر نہ کرنے کیلئے نمبر ہٹائے ہوئے ہیں‘ کراچی کے مختلف علاقوں کے رہائشی ایسے افراد جو پولیس گرفتاری کا شکار ہوئے ہیں انہو ں نے بتایا کہ پولیس گھروں پر چھاپے مارتی ہے اور بے گناہوں کو حراست میں لینے کے ساتھ گھروں سے لاکھوں روپے کا مال بھی لوٹ لیتی ہے۔