وفاقی حکومت کی سیکورٹی پالیسی ناکام ہوچکی ہے،مولا بخش چانڈیو

January 23, 2016 1:23 pm0 commentsViews: 16

وزیر داخلہ چوہدری نثار کو اپنی ناکامی کا اعتراف کرتے ہوئے اب گھر چلے جانا چاہئے، سانحہ سندھ ہوتا تو الزامات کی بارش ہوجاتی
وزیراعلیٰ سندھ سے استعفے کا مطالبہ کرنے والے سانحہ چار سدہ پر کیا کہیں گے، مشیر اطلاعات کی تصویری نمائش میں میڈیا سے گفتگو
کراچی( اسٹاف رپورٹر)مشیر اطلاعات سندھ مولا بخش چانڈیو نے کہا ہے کہ وفاقی حکومت کی سیکورٹی پالیسی ناکام ہوچکی ہے‘ سندھ میںکوئی واقعہ ہو تو وزیراعلیٰ سندھ سے استعفیٰ مانگا جاتا ہے‘ سانحہ چار سدہ حکومت کی ناکامی ہے‘ وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی کو اپنی ناکامی کا اعتراف کرتے ہوئے اب گھر چلے جانا چاہئے‘ وفاق کا سندھ کے ساتھ رویہ مختلف ہے‘ کرپشن میں ملوث افراد کیخلاف پورے ملک کو چھوڑ کر صرف سندھ میں کارروائیاں کی جارہی ہیں‘ ان خیالات کااظہار انہوں نے جمعہ کو شہید بینظیر بھٹو پارک کلفٹن میں بھٹو فیملی اور سیاست کے موضوع پر منعقدہ تصویری نمائش کے دورے کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ مشیر اطلاعات نے کہا کہ اگر سندھ میں کوئی سانحہ ہوتا ہے تو وفاق الزامات کی بارش کردیتا ہے اور سندھ میں گورنر راج کی صدائیں بلند ہوتی ہیں‘ وزیراعلیٰ سندھ سے استعفیٰ مانگنے والے سانحہ چارسدہ پر کیا کہیں گے‘سیکورٹی سے متعلق وفاق کے دعوے کھوکھلے ثابت ہوئے ہیں۔