آج صبح،جناح اسپتال میں ڈاکٹروں کی ہڑتال سے مریض پریشان

January 23, 2016 1:44 pm0 commentsViews: 28

پوسٹ گریجویٹ افسران اور ڈاکٹرز چار ماہ سے تنخواہیں نہ ملنے کے خلاف احتجاج کررہے ہیں
او پی ڈی اور آپریشن تھیٹر کا بائیکاٹ، احتجاجی مظاہرہ بھی کیا گیا، پلے کارڈ اٹھا رکھے تھے
کراچی( اسٹاف رپورٹر) جناح اسپتال کے ہائوس جاب افسران اور پوسٹ گریجویٹ ڈاکٹر نے4 ماہ سے تنخواہیں نہ ملنے پر احتجاج کیا، او پی ڈی کی بندش کے باعث عام مریض پریشان ہوگئے اسپتال کی انتظامیہ کے طلب کرنے کے باوجود ینگ ڈاکٹرز پیش نہیں ہوئے، جناح اسپتال کے ہائوس جاب آفیسرز اور پوسٹ گریجویٹ آفیسر نے4 ماہ سے تنخواہیں نہ ملنے کے خلاف جمعہ کو اسپتال میں احتجاج کرتے ہوئے او پی ڈی اور آپریشن تھیٹر بائیکاٹ کیا جس کے باعث مریضوں کو شدید پریشانی کا سامنا کرنا پڑا۔ مظاہرین نے بینرز اور پلے کارڈ ز اٹھا رکھے تھے جن پر مطالبات درج تھے۔ اس موقع پر مظاہرین نے زبردست نعرے بازی بھی کی۔ ینگ ڈاکٹرز نے کہا کہ ہمیں4 ماہ سے تنخواہ نہیں دی جا رہی نہ ہی تنخواہوں میں اضافہ کیا جا رہا ہے جس کے باعث ہم نے احتجاج کا راستہ اختیار کیا ہے۔ انہوں نے وزیر داخلہ سندھ سے مطالبہ کیا کہ ان کی تنخواہیں ادا کی جائیں۔ ینگ ڈاکٹرز کی جانب سے کئے جانے والے احتجاج اور او پی ڈی کے بائیکاٹ کے باعث مریضوں کو شدید پریشانی کا سامنا کرنا پڑا۔ جناح اسپتال کے ترجمان ڈاکٹر جاوید جمالی کا کہنا تھا کہ یہ آنری ہائوس جاب والے ڈاکٹر ہیں جنہوں نے حلف نامے کے ساتھ لکھ کر دیا تھا کہ وہ تنخواہوں کا تقاضا نہیں کریں گے لیکن اب وہ تنخواہوں کا تقاضا کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ تنخواہوں میں اضافے کی بات سیکریٹری صحت کے علم میں ہے یہ مسئلہ وہی حل کریں گے۔