کراچی میں گینگ پالٹکس کا دور ختم ہوگیا، خواجہ اظہار

February 2, 2016 3:00 pm0 commentsViews: 24

وزیراعلیٰ سندھ قائم علی شاہ اپنے عہدے کا حلف اٹھانے کے بعد مزار قائد پر حاضری دینے کے بجائے عزیر بلوچ کی دعوت میںگئے تھے
کراچی میں لوگوں کو لسانی بنیادوں پر قتل کیا گیا، ایم کیو ایم کے رہنما کی سندھ اسمبلی کے اجلاس سے قبل میڈیا سے بات چیت
کراچی( اسٹاف رپورٹر) سندھ اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر خواجہ اظہار الحسن نے کہا ہے کہ کراچی میں گینگ پالیٹکس کا دور ختم ہوگیا ہے‘ وہ پیر کو سندھ اسمبلی کے اجلاس سے قبل صحافیوں سے بات چیت کررہے تھے‘ انہوں نے کہا کہ وزیراعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ اپنے عہدے کا حلف اٹھانے کے بعد مزار قائد پر حاضری دینے کے بجائے لیاری میں عذیر بلوچ کی دعوت میں گئے تھے تاکہ ان کی آشیر باد حاصل کرسکیں‘ خواجہ اظہار الحسن نے کہا کہ لوگوں کو کراچی میں لسانی بنیاد پر قتل کیا گیا‘ تاجروں سے ماہانہ بھتے باندھے گئے‘ ان تمام جرائم کا منظر عام پر آنا ضروری ہے تاکہ یہ پتہ چل سکے کہ ان جرائم کے پس پردہ کون سی شخصیات تھیں‘ انہوں نے کہا کہ عذیر بلوچ کی جے آئی ٹی بھی ہوگی‘ تمام چیزیں واضح ہوجائیں گی‘ انہوں نے مزید کہا کہ جرائم میں ملوث لوگوں کا چاہے کسی بھی پارٹی یا گینگ سے تعلق ہو ان کے خلاف کارروائی ہونی چاہئے‘ قانون نافذ کرنیوالے اداورں پر بڑی ذمہ داری آگئی ہے کہ وہ کس کس کو سہولت کار سمجھتے ہیں‘ کے پی کے اور پنجاب میں پرائیویٹ اسکول مالکان کیخلاف مقدمات کی مذمت کرتے ہیں۔