ڈیفنس جعلی پولیس مقابلے میں زکریا کے قتل کا مقدمہ درج

February 2, 2016 3:09 pm0 commentsViews: 40

پیپلزپارٹی یوسی7 کے نومنتخب وائس چیئرمین نے چھ گھنٹے دھکے کھانے کے بعد ایف آئی آر درج کرائی
کراچی( کرائم رپورٹر) لیاری شاہ بیگ لین کے طالب علم محمد زکریا کو جعلی پولیس مقابلے میں قتل کرنے کا مقدمہ گذری پولیس تھانے میں درج ہوگیا۔ پیپلز پارٹی لیاری یو سی 7 سے نو منتخب وائس چیئر مین حفیظ نور کو اپنے نواسے کے قتل کی ایف آئی آر کٹوانے کیلئے6 گھنٹے دھکے کھانے پڑے، تفصیلات کے مطابق گذری پولیس میں عدالتی حکم پر گذری تھانے کی وہ پولیس پارٹی جس نے جعلی مقابلے میں نوجوان محمد زکریا ولد محمد یحییٰ کو گولیاں مار کر قتل اور اس کے ساتھی آزاد کو گرفتار کیا تھا اس پولیس پارٹی کے خلاف مقدمہ الزام نمبر36/2016 زیر دفعہ 802/84 کے تحت درج کیا گیا ہے۔ ہیڈ محرر کا دعویٰ ہے کہ پولیس پارٹی میں شامل 4اہلکاروں کے نام مقدمے میں شامل نہیں کئے گئے جبکہ واقعے والے روز گرفتار ہونے والا مقتول زکریا کا ساتھی آزاد اب جیل میں قید ہے۔ ذرائع کے مطابق مذکورہ مقابلے میں سب انسپکٹر دین محمد و دیگر اہلکار سکندر علی، نور الدین، اور مشتاق احمد شامل ہیں یا درہے کہ گذری تھانے کے پولیس اہلکاروں نے یکم جنوری 2016کو جعلی مقابلے میں ملائیشیا سے آئے ہوئے زکریا کو ہلاک کیا تھا۔ مقتول لیاری کا رہائشی تھا۔ جو ملائیشیا میں پڑھائی کے ساتھ کام بھی کرتا تھا۔ مقتول زکریا کے گھر والوں کا کہنا ہے کہ زکریا اپنی رقوم دوست سے لے کر کلفٹن سے آرہا تھا کہ پولیس نے سرکاری اسلحے کے زور پر رقوم لوٹی اور بعد ازاں جعلی مقابلے میں قتل کردیا۔