ہڑتال کرنیوالے ملازمین کو نتائج بھگتنا ہونگے، وزیراعظم

February 3, 2016 2:06 pm0 commentsViews: 17

پی آئی اے ملازمین کی ہڑتال سے عوام کو مشکلات ہورہی ہیں اور ادارے کو بھی نقصان پہنچ رہا ہے ہڑتال سے 50کروڑ کا نقصان ہوا ہے
کچھ سیاسی جماعتیں ہڑتال کرنیوالوں کے پیچھے ہیں ،پی آئی اے سے کسی ملازم کو نکالا نہیں جائیگا، ہڑتال اور دھمکیوں کا کلچر برداشت نہیں کرینگے
اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) وزیراعظم میاں محمد نواز شریف نے کہا ہے کہ پی آئی اے ملازمین کو ہڑتال نہیں کرنی چاہیے، ان ملازمین کو نتائج بھگتنا پڑینگے، ملازمین کی ہڑتال سے عوام کوشدید مشکلات کا سامنا ہے اور ادارے کو بھی نقصان ہو رہا ہے ان کا کہنا ہے کہ کچھ سیاسی جماعتیں اس ہڑتال کے پیچھے ہیں، ہڑتال اور دھمکیوں کا کلچر برداشت نہیں کیا جائے گا، پی آئی اے ملازمین کی ہڑتال سے ادارے کو پچاس کروڑ روپے کا نقصان ہوا ہے، نجی ٹی وی کے مطابق وزیراعظم نے کہا کہ تمام آپشنز استعمال کرنے کے بعد مذاکرات سے لازمی سروس ایکٹ لاگو کیا گیا، لازمی سروس ایکٹ ذوالفقار بھٹو، ضیا الحق اور پی پی کے دور میں بھی لاگو کیا گیا ہے، انہوں نے کہاکہ پی آئی اے کیلئے سرمایہ کاری کا انتظام کر رہے ہیں ادارے کو منافع بخش اور جدید بنائیں گے، انہوں نے کہاکہ پی آئی اے جوائنٹ ایکشن کمیٹی حکومت سے مذاکرات کرکے مسائل کا حل نکالے، کسی بھی ملازم کو نہیں نکالا جائے گا، پی آئی اے کی بہتری میں ادارے اور ملازمین کا فائدہ ہے انہوں نے مزید کہاکہ فلائٹس آپریشن کیلئے متبادل انتظامات کر لیے گئے ہیں۔