حکومت کو بے گناہوں کے قتل کا حساب دینا ہوگا،اپوزیشن

February 3, 2016 2:19 pm0 commentsViews: 19

پی آئی اے کی نجکاری کیخلاف قرارداد لانے کا فیصلہ، ملازمین پر وحشیانہ تشدد کی شدید مذمت، جوڈیشل انکوائری کا مطالبہ
حکومت میں ضیاء الحق کی روح گھس آئی ہے ،خورشید شاہ، 6فروری کو احتجاج کرینگے، شاہ محمود قریشی، مسلم لیگ (ن) نے اپنے خاتمے کا اعلان کردیا، صاحبزادہ طارق
اسلام آباد( نیوز ایجنساں) قومی اسمبلی میں متحدہ اپوزیشن نے کراچی میں پی آئی اے ملازمین پر وحشیانہ تشدد کی مذمت کرتے ہوئے پی آئی اے نجکاری کے خلاف قرار داد لانے کا فیصلہ کیا ہے اور جوڈیشل انکوائری کا مطالبہ کیا ہے۔ خورشید شاہ کا کہنا ہے کہ حکومت میں ضیاء الحق کی روح گھس آئی ہے۔ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ6 فروری کو احتجاج کرینگے صاحبزادہ طارق اللہ کہتے ہیں کہ مسلم لیگ ن نے اپنے خاتمے کا اعلان کر دیا، ان خیالات کا اظہار اپوزیشن لیڈر سید خورشید شاہ، شاہ محمود قریشی، صاحبزادہ طارق اللہ سمیت دیگر نے قومی اسمبلی کا اجلاس بلانے کیلئے ریکوزیشن قومی سیکریٹریٹ میں جمع کروانے اور متحدہ اپوزیشن سے چیمبر میں ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ قائد حزب اختلاف سید خورشید شاہ نے کہا کہ حکومت میں سابق صدر ضیاء الحق کی روح گھس آئی ہے۔ حکومت نے پی آئی اے ملازمین کیلئے ایکٹ کا اعلان کرکے مزدور وں کے حقوق کو سلب کرنے کی کوشش کی ، جو قابل مذمت ہے۔ وزیر اطلاعات پرویز رشید کی دھمکیاں قابل مذمت ہیں۔ انہوں نے کہا کہ طاقت کے بل بوتے پر ملازمین کے قتل کا حساب کون دے گا، حکومت نے سانحہ ماڈل ٹائون کو دہرایا۔ تحریک انصاف کے ڈپٹی پارلیمانی لیڈر شاہ محمود قریشی نے کہا کہ تحریک انصاف کراچی میں ہونیو الے واقعے کی مذمت کرتی ہے۔ اس کا حساب حکومت کو دینا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ اسپیکر قومی اسمبلی اسمبلی ریکوزیشن پر14 دن سے پہلے بھی اجلاس بلایا جائے۔ قومی اسمبلی میں جماعت اسلامی کے پارلیمانی لیڈر صاحبزادہ طارق اللہ نے کہا کہ حکومت ہٹ دھرمی سے کام لے رہی ہے۔ کراچی میں بے گناہ ملازمین کو قتل کیا گیا، جو اپنے حقوق کیلئے آواز اٹھا رہے ہیں۔