ہوٹل کے مالک کا اغواء اور قتل، 2خواتین سمیت 4مجرموں کو سزائے موت

February 3, 2016 2:19 pm0 commentsViews: 21

انسداد دہشتگردی عدالت نے شیخ منصور کو لفٹ کے بہانے اغواء اور قتل کرکے لاش کے ٹکڑے کرکے پھینکنے کا جرم ثابت ہونے پرمحسن رضاانکی اہلیہ شازیہ اور عدنان کو سزائے موت سنائی
مذکورہ افرادنے کسٹم کلیئر ایجنٹ کو بھی قتل کیا تھا ،مہاجر قومی موومنٹ کے رہنما بدراقبال کے قتل کے ملزم کا جسمانی ریمانڈ، رشید عرف ڈاکٹر نے 2006 میں ایم اے جناح روڈ پر قتل کیا تھا
کراچی( اسٹاف رپورٹر) انسداد دہشت گردی کی عدالت نے ہوٹل کے مالک کے اغواء اور قتل میں ملوث2 خواتین سمیت4 مجرموں کو موت کی سزا سنا دی، تفصیلات کے مطابق انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت کے جج اخلاق حسین لاڑک نے مقامی ہوٹل کے مالک شیخ منصور کے قتل میں ملوث محسن رضا اور اس کی اہلیہ مسماۃ شازیہ، شریک مجرمہ نازیہ اور عدنان حیدر کو جرم ثابت ہونے موت کی سزا سنائی، اغواء کے جرم میں مجرموں کو7, 7 سال قید اور فی کس50 ہزار روپے جرمانے کی سزا الگ سنائی ہے۔ استغاثہ کے مطابق 3 جولائی2008ء کو سزا یافتہ خواتین طارق روڈ پر واردات کیلئے کھڑی تھی، اسی اثناء میں مقتول اپنی گاڑی میں جا رہا تھا کہ اسے روکا اور بتایا کہ ان کی گاڑی خراب ہو گئی ہے اور وہ اکیلی ہیں، ڈراپ کرنے کی استدعا کی جس پر مقتول نے دونوں کو گاڑی میں سوار کرلیا تھا، جب گاڑی لیاقت آباد پہنچی تو پہلے سے موجود اس کے ساتھیوں نے اسے اغواء کرکے گھر میں قید کردیا اور رقم اور موبائل فون وغیرہ لوٹ لیا اور اسے قتل کرکے لاش کے ٹکڑے کرکے بیگ میں ڈال کر کچرا کنڈی میں پھینک دی تھی۔ بعد ازاں شناخت نہ ہونے پر پولیس نے اسے دفنا دیا تھا۔ مقتول کے اہلخانہ نے تھانہ کلفٹن میں اغواء کا مقدم درج کرایا تھا بعد ازاں پولیس نے 22 جون کسٹم کلیئرنگ ایجنٹ سہراب خان کے قتل میں22 جولائی کو مذکورہ ملزمان کو گرفتار کیا تھا جنہوں نے مقامی تاجر کے قتل کا اعتراف کیا اور اس موقع پر2 چشم دید گواہوں نے انہیں شناخت کیا تھا۔ دسمبر2011ء کو انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت نے سہراب خان کے قتل می محسن رضا کو موت کی سزا جبکہ تینوں مجرموں کو عمر قید کی سزا سنائی تھی، علاوہ ازیں عدالت نے مہاجر قومی موومنٹ کے سابق صوبائی وزیر بدر اقبال کے قتل میں ملوث ایم کیو ایم کے رشید عرف ڈاکٹر کو4 فروری تک جسمانی ریمانڈ پر پولیس کی تحویل میں دیدیا۔ رینجرز اور پولیس نے ملزموں کو جوڈیشل مجسٹریٹ جنوبی طاہر رحمن کی عدالت میں سخت سیکورٹی میں پیش کیا، پیشی کے موقع پر ملزم کے چہرے کو کپڑے سے ڈھانپ رکھا تھا۔ پولیس نے عدالت کو آگاہ کیا کہ ملزم نے2006ء میں ایم اے جناح روڈ نزد سبحان اللہ بیکری کے قریب فائرنگ کرکے صوبائی وزیر بدر اقبال کو قتل کر دیا تھا جبکہ فائرنگ کے نتیجے میں مہاجر قومی موومنٹ کے شجاعت عباس بھی زخمی ہوئے تھے۔