عزیربلوچ کی گرفتاری کسی اہم مسئلہ سے توجہ ہٹانے کی کوشش ہے، مولابخش چانڈیو

February 3, 2016 3:43 pm0 commentsViews: 20

پی پی وفاقی حکومت کی نجکاری کی پالیسی کو مسترد کرتی ہے، مشیراطلاعات وزیراعلیٰ
پی آئی اے ملازمین کا احتجاج ان کا آئینی اور جمہوری حق ہے، ملیر میں صحافیوں سے گفتگو
کراچی(اسٹاف رپورٹر)وزیر اعلیٰ سندھ کے مشیر برائے اطلاعات مولا بخش چانڈیو نے کہا ہے کہ عذیر بلوچ کی اچانک گرفتاری ظاہر کرنا کسی اہم مسئلے سے توجہ ہٹانے کی کوشش ہے‘ انہوں نے پی آئی اے کے ملازمین پر انتظامیہ کی جانب سے کرائے گئے تشدد کی پر زور الفاظ میں مذمت کی ہے اس تصادم کے دوران دو ملازمین کے جاںبحق ہونے پر دلی دکھ کا اظہار کیا انہوں نے ملازمین اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے مابین جھڑپ کے دوران نجی ٹی وی چینل کے کیمرہ مین اور صحافیوں کے زخمی ہونے کی بھی پر زور الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ پی آئی اے ملازمین کا احتجاج انکا آئینی او ر جمہوری حق ہے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے کراچی میں ملیر پریس کلب کے دورے کے دوران صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔انہوں نے کہا کہ پاکستان پیپلز پارٹی وفاقی حکومت کی نجکاری کی پالیسی کو مسترد کرتی ہے ۔پاکستان اسٹیل مل اور پاکستان انٹر نیشنل ائیر لائین قومی ادارے اور اثاثے ہیں جن کو اونے پونے داموں نجکاری کے خلاف ہر سطح پر مذمت کریں گے ۔نجکاری کی پالیسی کے سبب ملازمین سڑکوں پر ہیں اور انتظامیہ کی جانب سے ان پر تشدد کیا جارہا ہے جو کہ انتہائی قابل مذمت ہے ۔انہوں نے کہا کہ نجکاری کے ذریعے پسندکے لوگوں کو ادارے فروخت کئے جارہے ہیں اور لوگوں سے روزگار چھینا جارہا ہے (ن)لیگ کی حکومت جب بھی آئی ہے تو نچلے طبقے کے افراد غیر دانشمندانہ پالیسیوں کے سبب بے چین رہتے ہیں انہوں نے کہا کہ ملک میں ایسا سیاسی نظام ہے جس سے ایک صوبے میں انتخابات جیتنے والی پارٹی پورے ملک پر حکومت کرتی ہے وفاق تب ترقی کرے گا جب وفاقی اکائیو کو برابر کے حقوق دیئے جائیں ۔عذیر بلوچ کے حوالے سے ایک سوال پر مشیر اطلاعات نے کہا کہ عذیر بلوچ کئی ماہ سے حراست میں تھے تاہم اس کی گرفتار ی کو اچانک ظاہر کرکے ملک کے کسی اہم مسئلہ سے توجہ ہٹانے کی کوشش کی جارہی ہے مجھے خوف ہے کہ ملک کو کسی بڑے بحران میں چھوڑ کر جائیں گے (ن) لیگ کو وفاق پاکستان کا خیال نہیں ہے ۔