گڈز ٹرانسپورٹرز کی ہڑتال ،بندرگاہ پر 350کنٹینرز رک گئے

February 5, 2016 2:10 pm0 commentsViews: 17

ٹرانسپورٹرز کے احتجاج کے باعث کراچی سے سندھ ،پنجاب اور بلوچستان جانے والے سامان کی ترسیل بھی روک دی گئی
مال بردار گاڑیوں کی چیکنگ کے نام پر لوٹ مار اور افغان گاڑیوں کا داخلہ بند کیا جائے، ہڑتالی ٹرانسپورٹرز کے مطالبات
کراچی( کرائم رپورٹر) پاکستان گڈز ٹرک اونرز ایسوسی ایشن نے بڑھتی ہوئی وارداتوں کیخلاف ملک بھر میں ہڑتال کردی جس کے نتیجے میں 350 آئل ٹینکرز بندرگاہ پر ہی رک گئے‘ تفصیلات کے مطابق جمعرات کو گڈز ٹرانسپورٹرز کی جانب سے کی جانیوالی ہڑتال اور احتجاج سے سندھ‘ پنجاب اور بلوچستان کے درمیان ٹریفک کی روانی شدید متاثر ہوئی ہے اور سامان کی ترسیل روک دی گئی ہے‘ ہڑتال کے باعث اور کراچی کے داخلی و خارجی راستوں پر گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگ گئی ہیں۔ علاوہ ازیں ٹرانسپورٹرز کی ہڑتال کے باعث350 آئل ٹینکرز بندرگاہ پر ہی رک گئے۔ مظاہرین نے کہا ہے کہ لیڈر ٹیکس اور ٹوکن ٹیکس کی شرح بڑھادی گئی ہے جبکہ موٹر وے پولیس زائد وزن پر چالان کرتی ہے جس کی وجہ سے ٹرانسپورٹرز کے اخراجات بڑھ جاتے ہیں‘ کراچی اور لاہور کے نواحی علاقوں میں لوٹ مار ہوتی ہے جس کی روک تھام کیلئے کوئی اقدامات نہیں کئے جارہے ‘ مال بردار ٹرکوں کی چیکنگ کے نام پر ٹرانسپورٹرز کو تنگ کرنا بند کیا جائے اور افغان مال بردارٹرکوں کے پاکستان میں داخلے پر پابندی لگائی جائے‘ ٹیکس کی شرح4 فیصد بڑھانے پر گاڑیاں نہیں چلائیں گے اور گڈز ٹرانسپورٹ میں لوڈنگ او ان لوڈنگ بھی نہیں ہوگی۔