نواز شریف حکومت نہیں بادشاہت چلارہے ہیں،عمران خان

February 8, 2016 1:15 pm0 commentsViews: 23

پی آئی اے کے مسئلے کو مذاکرات سے ہینڈل کرتے تو اربوں کانقصان نہ ہوتا ،معاملہ پارلیمنٹ میں آتا تو ڈیڈ لاک پیدا نہ ہوتا،یہ سب حکومت کی وجہ سے ہوا
اہم فیصلے کسی کو اعتماد میں لئے بغیر دونوں بھائی خود کرلیتے ہیں ،سی پیک منصوبے پر سب کو اعتماد میں لیا جائے، حکومت نے عوام پر 51فیصد سیلز ٹیکس لگایا ہوا ہے، میڈیا سے گفتگو
کراچی(ا سٹاف رپورٹر) پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ نواز شریف حکومت نہیں بادشاہت چلارہے ہیں‘ پی آئی اے کا مسئلہ مذاکرات کے ذریعے حل کیا جائے‘ اس مسئلہ کی وجہ سے مسافروں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے‘ نواز شریف اگر اس مسئلہ کو صحیح طرح ہینڈل کرتے تو آج اربوں روپے کا نقصان نہ ہوتا‘ اتوار کو ایئر پورٹ پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ پی آئی اے کا معاملہ پارلیمنٹ میں آتا تو ڈیڈ لاک ہی نہ ہوتا‘ یہ ڈیڈ لاک نواز حکومت کی وجہ سے پیدا ہوا ہے‘ لہٰذا اب مسئلہ حل کرنا بھی ان کی ہی ذمہ داری ہے‘ انہوں نے کہا کہ پاک چین اقتصادی راہداری منصوبے کے حوالے سے وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا پرویز خٹک کو اعتماد میں نہیں لیا گیا‘ دونوں بھائی کسی کو اعتماد میں لئے بغیر خود ہی فیصلے کرلیتے ہیں‘ ان ہی کی وجہ ملک کے دیگر حصوں میں پنجاب کیخلاف نفرت بڑھتی ہے‘ سی پیک منصوبے پر تمام لوگوں کو اعتماد میں لیا جائے‘ عمران خان نے کہا کہ حکومت نے سی پیک منصوبے کے نام پر44 ارب روپے کے قرضے لئے ہوئے ہیں‘ جس میں سے80فیصد رقم توانائی کے منصوبوں کیلئے ہے‘ حکومت نے عوام پر51 فیصد سیلز ٹیکس لگایا ہوا ہے‘ نواز شریف کے عوامی منصوبوں میں ذاتی فائدے ہوتے ہیں۔