سعودی عرب نے شیعہ عالم شیخ نمر کے بھتیجے کو پھانسی دینے کا فیصلہ کرلیا

February 8, 2016 1:13 pm0 commentsViews: 30

17سالہ علی کو 2012میں حکومت مخالف سرگرمیوں اور احتجاجی مظاہرین میں شرکت کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا
ریاض /لندن( نیوز ڈیسک) برطانوی میڈیا نے دعویٰ کیا ہے کہ سعودی عرب نے شیعہ علما شیخ نمر کے بھتیجے علی النمرکو بھی پھانسی دینے کا فیصلہ کرلیا جس سے سعودی عرب ایران کے تعلقات مزید کشیدہ ہونے کا خطرہ پیدا ہوگیا ہے‘ علی النمر کی والدہ’’ ام بکر‘‘ نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ ان کے بیٹے کو کسی بھی وقت پھانسی دی جاسکتی ہے‘ 17 سالہ علی النمر کو 2012 ء میں ریاست مخالف سرگرمیوں اور احتجاج مظاہروں میں شرکت کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا اب وہ سزائے موت کے منتظر ہیں‘ ڈیلی میل کے مطابق ام بکر کا کہنا ہے کہ ’’ میرے بیٹے کو 2011 ء میں حراست میں لیا گیا لیکن ہمیں اب معلوم ہوا ہے کہ اسے2 سال قبل ہی موت کی سزا سنائی جاچکی ہے‘ انہوں نے الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ پولیس نے تشدد کرکے میرے بیٹے سے اعتراف جرم کرایا انہوں نے میرے بیٹے کو اپنے انکل شیخ نمر کیخلاف کارڈ کے طور پر استعمال کیا‘ حکومت میرے بیٹے کو شیخ نمر کا بھتیجا ہونے کی سزا دے رہی ہے۔