پی آئی اے سمیت تمام اداروں کی نجکاری سرمایہ دارانہ دہشتگردی ہے، آل پارٹیز کانفرنس

February 8, 2016 1:14 pm0 commentsViews: 28

یہ لوگوں کو غلام بنانے کیلئے ہے ،حکومت قومی اداروں کو فروخت کرنے کی بجائے اصلاحات پر توجہ دے، ماضی میں بھی یہ تجربہ ناکام رہا، مزید تجربات سے باز رہا جائے
نجکاری نے ابتک 5لاکھ افراد کو بے روزگار کردیا، حکومت پی آئی اے ملازمین کا مسئلہ بات چیت سے حل کرے، خواجہ طارق نذیر ،حبیب الدین جینیدی،حافظ نعیم الرحمن ودیگر کا خطاب
کراچی (اسٹاف رپورٹر) مختلف سیاسی و مذہبی جماعتوں‘ مزدور یونینوں اور پی آئی اے جوائنٹ ایکشن کمیٹی کے رہنمائوں نے پی آئی اے اور اسٹیل مل سمیت دیگر اداروں کی مجوزہ نجکاری کو مسترد کرتے ہوئے اسے ملکی و قومی مفادات کے منافی قرار دیا ہے اور کہا ہے کہ حکومت قومی اداروں کو فروخت کرنے کے بجائے اصلاحات پر توجہ دے‘ ماضی میں نجکاری کاتجربہ ناکام رہا ہے‘ حکومت مزید تجربے کرنے سے باز رہے‘ نجکاری سرمایہ دارانہ دہشت گردی ہے جس کے زریعے لوگوں کو غلام بنایا جاتا ہے‘ وزیراعظم کو اپنے لب و لہجہ کو نرم کرنا ہوگااور اپنے ذرائع کے رویوں کو بھی درست کرنا ہوگا جن کی وجہ سے خود وزیراعظم کو پریشانی کا سامنا کرنا ہے‘ نجکاری کے نتیجہ میں اب تک5 لاکھ افراد بیروزگار ہوگئے ہیں‘ حکومت پی آئی اے ملازمین کا مسئلہ بات چیت کے ذریعے حل کرے‘ ان خیالات کااظہار مقررین نے اتوار کو ادارہ نور حق میں جماعت اسلامی کراچی کے زیر اہتمام پی آئی اے اور اسٹیل مل سمیت دیگر اداروں کی مجوزہ نجکاری کیخلاف متحدہ آل پارٹیز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ کانفرنس کی صدارت امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن نے جبکہ نظامت کے فرائض نائب امیر جماعت اسلامی کراچی مسلم پرویز نے انجام دیئے‘ کانفرنس سے پی آئی اے جوائنٹ ایکشن کمیٹی کے چیئرمین کیپٹن سہیل بلوچ‘ پیپلز پارٹی کے رہنما نجمی عالم‘ جمعیت علماء اسلام (ف) کے قاری عثمان‘ مسلم لیگ (ن) کے خواجہ طارق نذیر‘ جمعیت علماء پاکستان کے صدیق راٹھور‘ پی ڈی پی کے بشارت مرزا‘ کراچی بار کے سابق صدر نعیم قریشی‘ مزدور رہنما حبیب الدین جنیدی‘ لیاقت علی ساہی‘ لطیف مغل‘ ظفر خان اور دیگر نے بھی خطاب کیا‘ کانفرنس میں منظور کی گئی قرار داد میں مطالبہ کیا گیا کہ حکومت پی آئی اے اور اسٹیل مل سمیت دیگر اداروں کی نجکاری سے باز رہے‘ پی آئی اے میں لازمی سروسز ایکٹ واپس لیا جائے‘ پی آئی اے کے قتل کئے جانے والے ملازمین کے قاتلوں کو گرفتار کیا جائے اور واقعہ کی تحقیقات کیلئے جوڈیشل کمیشن قائم کیا جائے‘ پی آئی اے کے گمشدہ چار مزدوروں کو فوری بازیاب کرایا جائے اور گرفتار مزدوروں کو فوری رہا کیا جائے۔